.

امریکی ڈرون طیاروں کے ذریعے ایران کے خفیہ بیلسٹک میزائلوں کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ڈرون طیاروں نے ایران میں بیلسٹک میزائل تیار کرنے کی خفیہ تنصیبات کا انکشاف کیا ہے۔ یہ بات امریکی چینل "فوکس نیوز" کی رپورٹ میں بتائی گئی۔ اس طرح ایران جوہری معاہدے کی ایک اہم شق کی خلاف ورزی کا مرتکب ہوا ہے۔

فوکس نیوز کے ساتھ گفتگو میں امریکی فوج میں "سیکرٹ آپریشنز" کے ایک سابق رکن برٹ ولیکوئچ کا کہنا تھا کہ "میں ایران میں ان خفیہ بیلسٹک میزائلوں کے ملنے اور ان کی جگہ کے تعین پر کسی طور بھی حیران نہیں"۔ انہوں نے مزید کہا کہ "بعض لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جوہری معاہدے سے اس لیے علاحدگی اختیار کی کیوں کہ اس کا متن شیطانی تھا۔ تاہم حقیقت یہ ہے کہ امریکی صدر کو بعض لوگوں نے یہ خفیہ معلومات پہنچائی کہ ایران میں اس نوعیت کی تنصیبات موجود ہیں۔ یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ ایرانیوں کی جانب سے روزانہ جوہری معاہدے کی خلاف ورزی ہو رہی ہے"۔

سابق امریکی عسکری اہل کار نے بتایا کہ " ہم طویل عرصے سے جانتے تھے کہ ایران خفیہ بیسلٹک میزائل کی تیاری کے لیے شمالی کوریا کے شانہ بشانہ کام کر رہا ہے۔ لہذا شمالی کوریا کے ساتھ کسی بھی معاہدے پر دستخط کرنے سے قبل ہمیں ممکنہ خفیہ سرگرمیوں کو زیر غور رکھنا ہو گا"۔

فوکس نیوز پر نشر ہونے والی تصاویر ایران کے شہر شاہرود میں خفیہ تنصیب کی ہے۔

ولیکوئچ نے امریکی حکام کو نصیحت کی کہ شمالی کوریا کے ساتھ مذاکرات کے دوران اس بات کو بھی مدّ نظر رکھیں کہ ایران گزشتہ برسوں کے دوران کیا کچھ کرتا رہا ہے۔