.

اردن کے شاہ عبداللہ دوم اور ولی عہد مکہ اجلاس میں شرکت کریں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اردن کے شاہ عبداللہ دوم اور ولی عہد شہزادہ حسین بن عبداللہ اتوار کو مکہ مکرمہ میں چار ملکی اجلاس میں شر کت کریں گے۔ یہ اجلاس سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے طلب کیا ہے ۔اس میں میزبان خادم الحرمین اور الشریفین کے علاوہ متحدہ عرب امارات اور کویت کے قائدین شرکت کریں گے اور اس میں اردن کو درپیش اقتصادی بحران کے بارے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

شاہ عبداللہ نے ایک بیان میں مکہ اجلاس میں شرکت کرنے والے ممالک اور اردن کے درمیان مضبوط تعلقات کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

اردنی پارلیمان کے اسپیکر عاطف تراونہ نے العربیہ ٹیلی ویژن چینل سے ایک انٹرویو میں کہا کہ ’’ سعودی عرب اور اردن کے درمیان مضبوط اور تاریخی تعلقات استوار ہیں‘‘ ۔

انھوں نے اردن میں جاری اقتصادی بحران کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کی امداد کی ضرورت پر زور دیا تھا ۔انھوں نے کہا اردن کو امید ہے کہ خلیج تعاون کونسل ( جی سی سی) کی جانب سے موجودہ اقتصادی بحران سے نمٹنے کے لیے امداد ملک کے لیے اچھا آغاز ثابت ہوگی۔

سعود ی عرب کے شاہی دیوان کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق مکہ میں اتوار کو چار ممالک شرکت کریں گے اور وہ اردن کو درپیش اقتصادی بحران سے نمٹنے کے لیے امداد مہیا کرنے پر غور کریں گے۔

اردن کے دارالحکومت اردن سمیت مختلف شہروں میں گذشتہ ہفتے عشرے کے دوران میں مہنگائی اور ٹیکس کی شرح میں اضافے کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے جاتے رہے ہیں۔ان کے نتیجے میں وزیراعظم ہانی الملقی کو مستعفی ہونا پڑا ہے۔