.

لیبیا: فوج کی کارروائی میں القاعدہ کا علاقائی مفتی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی سرکاری فوج نے شورش زدہ علاقے ’درنہ‘ میں ایک کارروائی کے دوران ’مجاھدین درنۃ‘ نامی گروپ کے اہم کمانڈر اور تنظیم کے مفتی عمر رفاعی سرور کو ہلاک کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ’مجاھدین درنۃ‘ نامی گروپ القاعدہ سے وابستہ ہے اور اس کے خلاف حالیہ دنوں میں لیبی فوج نے بھرپور جنگ شروع کر رکھی ہے۔

’مجاھدین درنہ‘ کے مفتی کی ہلاکت کا واقعہ ہفتے کے روز شیحا کے مقام پر پیش آیا۔

القاعدہ کے مقرب سوشل نیٹ ورکنگ صفحات پر القاعدہ کے مقامی مفتی کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی اور بتایا گیا ہے کہ رفاعی سرور کو لیبی فوج نے ایک فضائی حملے میں نشانہ بنایا۔ بیانات میں کہا گیاہے کہ فوج نے درنۃ میں ایک گھر پر بمباری کی جس میں القاعدہ مفتی مقیم تھا۔ اسی شہر میں ایک دوسرے حملے میں عبدالسلام العوامی نامی ایک جنگجو کے مارے جانے کی بھی اطلاعات ہیں۔ مقتول درنہ کی کالونی 400 کی مسجد میں خطیب بھی تھا اور اس کا تعلق القاعدہ کے مقرب گروپ سے بتایا جاتا ہے۔