.

الحدیدہ ایندھن اور اشیائے ضروریہ لانے کی کوارڈی نیش کر رہے ہیں: عرب اتحادی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی آئینی حکومت کی حمایت کرنے والی عرب اتحادی فوج کا کہنا ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے ساتھ مل کر الحدیدہ بندرگاہ ایندھن سمیت دیگر اشیائے ضروریہ کی ترسیل سے متعلق تحقیقات جاری رکھے گی۔

اتحادی فوج کا کہنا ہے کہ وہ الحدیدہ بندرگاہ آنے والے جہازوں کو پرمٹ جاری کرتے رہیں گے۔ انھوں نے بتایا کہ الحدیدہ شہر کو حوثی ملیشا سے واگذار کرانے کے بعد سے دو تجارتی بحری جہازروں کو الحدیدہ بندرگاہ پر لنگر انداز ہونے کی اجازت دی گئی ہے۔

اسی اثنا میں عرب اتحادی فوج کی جنگی کشتیوں نے الحدیدہ شہر میں حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں پر شدید گولا باری کی۔ یہ کارروائی یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کاروں کی الحدیدہ شہر کی جنوبی سمت پیش قدمی کے جلو میں کی جا رہی ہے۔

مقامی ذرائع نے بتایا کہ عرب اتحادی فوج کی لڑاکا بحری کشتیوں نے نیول بیس، نیول کالج اور الکثیب ریجن میں باغیوں کے متعدد ٹھکانوں پر گولا باری کی۔

یمنی فوج نے عرب اتحادیوں کی مدد سے الحدیدہ پر کنڑول کے بعد شہر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے اندر داخلے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ یہ پیش رفت ہوائی اڈے کا مغربی دروازہ توڑنے کے بعد سامنے آئی۔ اس کے بعد حوثیوں سے تمام حفاظتی چوکیاں واپس لے لی گئیں۔

ادھر ہوائی اڈے کے سامنے المنظر کالونی میں بھی سرکاری فوج اور باغی ملیشاوں کے درمیان شدید لڑائی کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔