.

ہم عالمی برادری سے ایرانی قیادت کے محاسبے کا مطالبہ کرتے ہیں: پومپیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ ان کا ملک کینیڈا کے اُس فیصلے کی بھرپور تائید کرتا ہے جس میں دہشت گردی کے لیے ایران کی مسلسل سپورٹ کی سخت مذمت کی گئی ہے وار ایرانی پاسداران انقلاب کو دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔

جمعے کے روز اپنی ٹوئیٹ میں انہوں نے کہا کہ "ایرانی عوام بدعنوان نظام کی خلاف ورزیوں کے سامنے کھڑے ہو رہے ہیں۔ ہم ان کی سپورٹ کرتے ہیں اور دیگر ممالک سے بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ایرانی قیادت کا محاسبہ کرے"۔

امریکا کا یہ موقف کینیڈا کی پارلیمنٹ کی اُس قرار داد پر رائے شماری کے بعد سامنے آیا ہے جس میں منگل کے روز ایرانی پاسداران انقلاب کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دیا گیا اور کینیڈا کی حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ ایرانی نظام کے ساتھ تعلقات بحال کرنے کے مذاکرات روک دے۔

ایرانی وزارت خارجہ نے بدھ کے روز کینیڈا کی پارلیمنٹ کی قرارداد پر تبصرہ کرتے ہوئے اسے ایک "تزویراتی غلطی" قرار دیا۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے ایک اخباری بیان میں کہا کہ "قرارداد میں پاسداران انقلاب کے خلاف دعوؤں اور الزامات کو بنیاد بنایا گیا ہے"۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اگرچہ قرارداد ابھی اپنے ابتدائی مراحل میں ہے اور اسے قانون میں تبدیل کرنے کے واسطے دیگر مراحل پورے ہونا ضروری ہے تاہم حتمی صورت میں منظوری پر یقینا یہ ایک تزویراتی اور بنیادی غلطی ہو گی جس کے تخریبی اثرات مرتب ہوں گے"۔