.

اسرائیل کا غزہ کی پٹی میں جلتی ہوئی پتنگیں اڑانے والے فلسطینی کی گاڑی پر فضائی حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں ایک گاڑی پر فضائی حملہ کیا ہے اور کہا ہے کہ اس گاڑی کا مالک غزہ سے اسرائیلی علاقے کی جانب جلتی ہوئی پتنگیں اڑا کر بھیج رہا تھا۔

اسرائیلی فوج کے اتوار کو اس فضائی حملے میں کوئی شخص زخمی نہیں ہوا ہے۔اسرائیل کے جنوبی علاقے میں زرعی زمینوں پر حالیہ ہفتوں کے دوران میں فلسطینیوں نے راکٹ حملے کیے ہیں اور جلتی ہوئی پتنگیں بھیجی ہیں۔

ان منفرد حملوں کے جواب میں صہیونی فوج نے سخت ردعمل کا ا ظہار کیا ہے۔ہفتے کے روز اس علاقے میں جلتی پتنگوں سے خشک کھیتوں میں آگ لگ گئی تھی۔

غزہ کے مکینوں نے حالیہ ہفتوں میں احتجاجی مظاہروں کے دوران میں جلتی ہوئی پتنگیں اسرائیلی علاقے کی جانب اڑانے کا سلسلہ شروع کیا تھا۔اسرائیلی فوجیوں کی 30 مارچ کے بعد غزہ کے سرحدی علاقے میں براہ راست فائرنگ سے ایک سو سے زیادہ فلسطینی مظاہرین شہید ہوگئے ہیں۔

اسرائیلی قبضے کے خلاف مظاہروں میں حماس کے کارکنان پیش پیش تھے اور وہی ان مظاہروں کی قیادت کررہے تھے۔اسرائیلی فوج حماس ہی کو جلتی ہوئی پتنگیں اڑانے کی ذمے دار قرار دیتی ہے۔