.

پیرس میں یمن کے بارے میں عالمی انسانی کانفرنس کا انعقاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں آج بروز بدھ یمن کے بارے میں ایک بین الاقوامی انسانی کانفرنس منعقد ہو رہی ہے۔ اس میں جنگ زدہ یمن میں انسانی صورت حال اور اس کے حل کے طریقوں پر غور کیا جارہا ہے۔

قبل ازیں منگل کو پیرس میں ایک سیمی نار منعقد ہوا تھا اور اس میں امدادی تنظیموں کے نمائندوں اور محققین نے جنگ سے متاثرہ یمنی شہروں الحدیدہ اور تعز میں بالخصوص انسانی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

سیمی نار کے شرکاء نے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں میں ملوث افراد کے خلاف مقدمات چلانے کا مطالبہ کیا تھا ۔انھوں نے عرب اتحادی افواج اور فرانس کی جانب سے انسانی امدادی کارکنوں اور گیارہ ڈاکٹروں کو متاثرہ علاقوں میں بھیجنے کے اقدام کو سراہا۔ فرانس، ساحلی شہر الحدیدہ میں حوثی ملیشیا کی بچھائی گئی بارودی سرنگوں کی تلفی کے لیے ایک خصوصی ٹیم بھی بھیج رہا ہے۔

پیرس میں انسانی امدادی کانفرنس ایسے وقت میں منعقد ہو رہی ہے جب الحدیدہ میں یمنی فوج نے عرب اتحادی فوج کی مدد سے حوثیوں کے خلاف لڑائی میں نمایاں پیش رفت کی ہے اور اس نے الحدیدہ کے ہوائی اڈے اور اس کے مضافات پر قبضہ کر لیا ہے۔کانفرنس کے شرکاء میں یمن میں کام کرنے والی بین الاقوامی ایجنسیوں اور ریاستوں کے نمائندے بھی شامل ہیں۔

کانفرنس میں جنگ سے متاثرہ یمنیوں کی تمام انسانی اور طبی ضروریات کا جائزہ لیا جائے گا اور یورپی یونین کے وعدوں کے مطابق فوری طور پر انسانی امداد مہیا کرنے کے لیے اقدامات تجویز کیے جائیں گے۔