تیونس: دہشت گرد حملے میں نیشنل گارڈز کے 6 اہل کار ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

تیونس میں الجزائر کی سرحد کے نزدیک واقع علاقے جندوبہ میں دہشت گردوں نے گھات لگا کر نیشنل گارڈز کے 6 اہل کاروں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

تیونس میں سرکاری خبر رساں ایجنسی نے حملے اور ہلاکتوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ یہ دہشت گرد کارروائی الفائجہ اور الصریا کے درمیان راستے کے نزدیک ہوئی۔

تیونس میں سکیورٹی ذرائع کے مطابق حملے میں نیشنل گارڈز کے گشتی دستے کو نشانہ بنایا گیا جو دو گاڑیوں پر مشتمل تھا۔ پہلی گاڑی پر دستی بم پھینکا گیا جب کہ دوسری گاڑی پر فائرنگ کی گئی۔

سال 2015ء میں تیونس میں تین بڑے حملے کیے گئے تھے۔ ان کارروائیوں میں دو میں سوسہ شہر میں سیاحوں اور ایک عجائب خانے کو نشانہ بنایا گیا۔ حملوں کے نتیجے میں درجنوں مغربی سیاح اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔

تیسرا حملہ 2015ء کے اواخر میں ہوا جب ایک خود کش بم بار نے صدارتی گارڈز کی بس کے نزدیک خود کو دھماکے سے اڑا دیا، کارروائی میں 14 اہل کار ہلاک ہوئے۔ اس کے بعد سے تیونس میں ایمرجنسی نافذ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں