جوہری ہتھیاروں سے دست برداری تک شمالی کوریا پر پابندیاں عائد رہیں گی: پومپیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے باور کرایا ہے کہ شمالی کوریا کے اپنے جوہری اسلحے سے مکمل دست بردار ہونے تک پیونگ یانگ پر عائد پابندیاں جاری رہیں گی۔

ٹوکیو میں جاپانی اور جنوبی کوریائی وزراء خارجہ کے ساتھ بات چیت کے بعد اتوار کے روز ایک پریس کانفرنس میں پومپیو کا کہنا تھا کہ "اگرچہ ہم دیکھ رہے ہیں کہ اس سلسلے میں بات چیت میں سامنے آنے والی پیش رفت حوصلہ افزا ہے تاہم محض یہ امر موجودہ پابندیوں کے نظام کی نرمی کے لیے جواز نہیں بن سکتا"۔

امریکی وزیر خارجہ شمالی کوریا کا دورہ روزہ دورہ مکمل کرنے کے بعد ٹوکیو پہنچے تھے۔

امریکی وزیر خارجہ کے مطابق "جوہری ہتھیاروں سے دست برداری کا معنی وسیع ہے جس میں ہتھیاروں کا مکمل مجموعہ شامل ہے۔ شمالی کوریا والے بھی اس کو سمجھتے ہیں اور انہوں نے اس امر کی مخالفت نہیں کی"۔ پومپیو نے واضح کیا کہ "جوہری ہتھیاروں کی مکمل تلفی کے عمل کے ساتھ تصدیق کی مربوط کارروائی ہو گی۔ امریکی صدر (ڈونلڈ ٹرمپ) اور شمالی کوریا کے سربراہ (کِم جونگ اُن) اسی امر پر آمادہ ہوئے"۔

دوسری جانب خارجہ امور کے جاپانی وزیر تارو کونو نے اعلان کیا ہے کہ جاپان، امریکا اور جنوبی کوریا نے باور کرایا ہے کہ شمالی کوریا کے خلاف پابندیوں پر کار بند رہا جائے گا یہاں تک کہ پیونگ یانگ اپنے جوہری ہتھیاروں اور بیلسٹک میزائل پروگرام سے دست بردار نہ ہو جائے۔

تارو کونو کا یہ بیان ٹوکیو میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اور جنوبی کوریا کی وزیر خارجہ کینگ کیونگ ہوا کے ساتھ ملاقات کے بعد سامنے آیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں