.

ایرانی کشتیوں سے امریکی بحری بیڑے کواب کوئی خطرہ نہیں رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ رواں سال سے خلیج میں موجود ہمارے بحری بیڑے کو ایرانی جنگی کشتیوں سے لاحق خطرات ختم ہوگئے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ماضی میں ایران خلیج میں موجود ہماری فوج اور جنگی بیڑے کو نقصان پہنچانے کی دھمکیاں دیتا رہا ہے مگر اب یہ دھمکیاں ماضی کا قصہ ہیں۔ پچھلے برسوں کے دوران ایران نے دسیوں بار سمندر میں ہماری فوج کی راہ روکنے اور خطرہ بننے کی کوشش کی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائیٹ 'ٹوئٹر' پر پوسٹ کی گئی متعدد ٹویٹس میں صدر ٹرمپ نے کہا کہ سال 2015ء کے دوران ایران نے سمندر میں 22 بار ہمارے مشن میں رکاوٹیں کھڑی کیں۔ 2016ء میں ایران کےجارحانہ واقعات کی تعداد 36 تک جا پہنچی جب کہ 2017ء میں بہ تدریج کمی آئی اور ایران کی طرف سے 14 بار ہمارے لیے مشکلات پیدا کی گئیں۔ رواں سال کے دوران اب تک ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب گذشتہ چار برسوں کے دوران خلیجی پانیوں میں موجود امریکی فوج اور ایرانی پاسداران انقلاب کے درمیان کئی بار تصادم کی کیفیت پیدا ہوئی تھی۔