.

برطانوی وزیراعظم نے یورپی یونین سے "قطعی عدم خروج" سے خبردار کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی وزیراعظم ٹریزا مے نے خبردار کیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ "بریگزٹ قطعا وقوع پذیر" نہ ہو کیوں کہ قانون ساز ارکان یورپی یونین سے نکلنے سے متعلق ٹریزا کے منصوبے کو کمزور کرنے کے درپے ہیں۔

اتوار کے روز "میل آن سنڈے" اخبار میں خاتون وزیراعظم نے لکھا ہے کہ "ملک کے لیے میرا سادہ سا پیغام یہ ہے کہ ہمیں اپنی توجہ انعام پر مرکوز رکھنا چاہیے۔ اگر ہم نے ایسا نہ کیا تو خطرہ ہے کہ انجام کے طور پر یورپی یونین سے قطعا کوئی علاحدگی عمل میں نہیں آئے گی"۔

گزشتہ ہفتے دو سینئر وزراء نے یورپی یونین سے نکلنے کے بعد برطانیہ کے (آئندہ مارچ سے) یونین کے ساتھ تجارت سے متعلق ٹریزا مے کے منصوبوں پر احتجاج کرتے ہوئے اپنے عہدوں سے استعفا دے دیا تھا۔

ٹریزا نے مزید لکھا کہ برطانیہ مذاکرات کے آئندہ دور میں یورپی یونین کے ساتھ سخت موقف اپنائے گا۔ انہوں نے کہا کہ "بعض لوگ یہ استفسار کر رہے ہیں کہ آیا یورپی یونین سے ہمارا خروج درحقیقت ہماری پسپائی کا نقطہ آغاز ہے۔ مجھے واضح کرنے دیجیے کہ یورپی یونین سے علاحدہ ہونے کا ہمارا معاہدہ کوئی ایسی طویل فہرست ہیں جس میں مذاکرات کاروں کے پاس چھوڑنے اور اختیار کرنے کے بہت آپشنز موجود ہوں۔ یہ ایک مکمل منصوبہ ہے جس کے نتائج پر مذاکرات نہیں ہو سکتے"۔