جرمنی میں بس میں چاقو سے حملہ،14 افراد زخمی

زخمیوں میں سعودی عرب کا کوئی شہری شامل نہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

جرمنی میں حکام کے مطابق شمالی شہر لیئوبِک میں ایک شخص نے ایک بس کے مسافروں پر چاقو سے حملہ کیا ہے، جس کے نتیجے میں کم سے کم 14 افراد زخمی ہو گئے ہیں۔ تاہم ابھی تک اس حملے کے محرک کا تعین نہیں ہو سکا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے جرمن حکام کے حوالے بتایا ہے کہ حملے میں زخمی ہونے والے افراد میں سعودی عرب کا کوئی شہری شامل نہیں۔

’شلسفیگ ہولسچائن‘ صوبے کی پولیس کے مطابق مسافروں سے بھری ایک بس شہر کے قریب ہی واقع ’ٹراوِن موئینڈے‘ نامی ساحل ِ سمندر پر جا رہی تھی جب ایک شخص نے مسافروں پر چاقو تان لیا۔ اخباری رپورٹس کے مطابق ڈرائیور نے فوری طور پر بس روک دی تاکہ مسافر بس سے نکل سکیں۔

عینی شاہدین نے جو حملے کے مقام سے قریب تھے نے بتایا،’’مسافروں نے بس سے باہر چھلانگ لگا دی۔ وہ چلا رہے تھے۔ یہ سب بہت خوفناک تھا۔ زخمی افراد کو بس سے باہر نکالا گیا۔ حملہ آور کے ہاتھ میں گھریلو استعمال کا ایک چاقو تھا۔ اسے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

لیئوبِک کی چیف پراسیکیوٹر اُرزلا ہنگسٹ نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا،’’ فی الحال ہم حملہ آور کی شناخت اور حملے کے محرک کے حوالے سے معلومات فراہم نہیں کر سکتے۔‘‘

مقامی پولیس نے ایک ٹویٹ پیغام میں کہا ہے کہ بس کے مسافروں پر حملے میں لوگ زخمی ہوئے ہیں لیکن کوئی ہلاکت نہیں ہوئی۔ ٹویٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ حملہ آور پولیس کی حراست میں ہے اور اسے پوچھ تاچھ کی جا رہی ہے۔

جرمن پراسیکیوٹرز کا کہنا ہے کہ اس حملے کے پیچھے ممکنہ طور پر مذہبی انتہا پسندی کا محرک ہو سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں