.

یمن میں خطرناک راستہ اختیار کرنے پر صلیب احمر کا جہاز سعودیہ میں اتار لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کی رٹ بحالی کے لیے سرگرم عرب اتحاد کا کہنا ہے کہ یمن میں خطرناک فضائی راستہ اختیار کرنے والے ریڈ کراس کے ایک امدادی جہاز کو صنعاء سے جیبوتی جاتے ہوئے سعودی عرب میں اتار لیا گیا ہے۔

’العربیہ‘ کے مطابق عرب اتحادی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے بتایا کہ گرینج کے معیاری وقت کے مطابق منگل کے روز دن 1300 بجے عالمی ریڈ کراس کمیٹی کے ایک امدادی طیارے کو خطرناک اور جنگی علاقے کی فضائی حدود سے گذرنے پر ہنگامی وارننگ جاری کی گئی مگر طیارے کی طرف سے کوئی جواب نہیں ملا۔ انہوں نے بتایا کہ یہ طیارہ صنعاء سے افریقی ملک جیبوتی جا رہا تھا۔ طیارے کے عملے سے رابطہ کرکے انہیں خطرناک روٹ سے ہٹنے کو کہا گیا مگر ہدایات پرعمل درآمد نہیں کیا گیا جس کے بعد ریڈ کراس کے جہاز کو 2:14 پر جازان کے شاہ عبداللہ ہوائی اڈے پر اتار لیا گیا۔

ترجمان کا کہنا ہےکہ طیارے کو سعودی عرب میں اتارنے کا مقصد یمن میں امدادی مشن کو لاحق خطرات سے بچانا ہے۔ کرنل ترکی المالکی نے کہا کہ امدادی جہاز پر عملے کے چار افراد سوار تھے۔ انہوں نے طیارے کو خطرناک اور آپریشن زون میں اڑانے کی کوشش کی جس پر طیارے کو سعودی عرب میں اتارنا پڑا۔