.

یمنی فوج کے البیضا ء میں نئے حملوں میں 25 حوثی باغی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج نے صوبہ البیضاء میں واقع ضلع الملاجم کو حوثی باغیوں کے قبضے سے مکمل طور پر آزاد کرانے کے لیے جمعرات کی صبح کو نئی کارروائی شروع کی ہے اور پہلے روز اس کے حملوں میں پچیس حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں ۔

یمن کے مغربی علاقے میں بیہان بریگیڈ کے کمانڈر جنرل مفریح بہاء اللہ کے مطابق حوثیوں کے خلاف کارروائی الحجفہ کے علاقے سے شروع کی گئی تھی اور سرکاری فوج عفر تک پہنچ گئی ہے ۔اس طرح چالیس کلومیٹر کا علاقہ آزاد کرا لیا گیا ہے اور عفر میں داخلے کے لیے مزید اٹھارہ کلومیٹر کا علاقہ آزاد کرانے کی ضرورت ہے۔ البیضاء شہر سمیت مختلف علاقوں میں حوثی ملیشیا کی کمک کو روکنے کے لیے یہ ایک اہم تزویراتی سنگم پر واقع ہے۔

یمنی جنرل نے ان اطلاعات کی تصدیق کی ہے کہ علاقے میں حوثیوں کے خلاف لڑائی جاری ہے اور اس میں ان کا بھاری جانی نقصان ہوا ہے۔انھوں نے حوثیوں کے پچیس جنگجوؤں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ لڑائی میں دس حوثی زخمی ہوگئے ہیں اور یمنی فوج نے ان کے قبضے سے مختلف اقسام کے ہتھیار برآمد کر لیے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ البیضا ء کی تمام گورنری کی آزادی اب تھوڑے ہی وقت کا معاملہ رہ گیا ہے اور یمن کے تمام علاقوں کی آزادی تک حوثیوں کے خلاف فوجی کارروائیاں جاری رکھی جائیں گی۔