امریکی پادری کا بحران : ٹرمپ کی دھمکی اور ترکی کا جواب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمعرات کے روز ترکی سے مطالبہ کیا ہے کہ گرفتاری کے دوران نظر بند رہنے والے امریکی پادری اینڈرو برینسن کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔ مذکورہ پادری کو دہشت گردی اور جاسوسی کے الزامات میں عدالتی کارروائی کا سامنا ہے۔

امریکی صدر نے اپنی ٹوئیٹ میں کہا کہ "امریکا پادری اینڈرو برینسن کی طویل گرفتاری پر ترکی پر سخت پابندیاں عائد کرے گا۔ بے قصور برینسن بہت زیادہ مشکل سے دوچار ہیں اور انہیں فوری طور پر رہا کیا جانا چاہیے"۔

دوسری جانب ترکی نے جمعرات کے روز باور کرایا ہے کہ وہ ہر گز کوئی دھمکی قبول نہیں کرے گا۔ ترک وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو کا کہنا ہے کہ "کوئی بھی ترکی کو حکم نہیں دے سکتا۔ اس حوالے سے ہمارے لیے دھمکیاں ناقابل قبول ہیں۔ ریاست کا قانون بنا کسی استثناء سب پر لاگو ہوتا ہے"۔

پادری برینسک کی گرفتاری اُن معلّق موضوعات میں سے ہیں جنہوں جو واشنگٹن اور انقرہ کے بیچ تعلقات کو کشیدگی کی جانب لے جا رہے ہیں۔

مذکورہ پادری کو اکتوبر 2016ء میں ترکی میں گرفتار کر لیا گیا تھا۔ انہیں دہشت گردی اور جاسوسی کے الزامات کے تحت گزشتہ سال نے سے عدالتی کارروائی سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں