.

’خامنہ ای مردہ باد‘ کے نعروں کے ساتھ احتجاج تہران جا پہنچا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ مزید وسعت اختیار گیا ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق ایران کے دارالحکومت تہران کے کوچہ وبازار میں بھی ’خامنہ ای مردہ باد‘ کے نعروں کے ساتھ احتجاج جاری ہے۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق تہران کے ’ولی عصر‘ چوک میں ہزاروں افراد نے جمعہ کے روز حکومت کے خلاف جلوس نکالا۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اورکتبے اٹھا رکھے تھے جن پر خامنہ ای مردہ باد اور آمریت مردہ باد کے نعرے درج تھے۔ مظاہرین کی سرگرمیاں سوشل میڈیا پر بھی زیادہ سے زیادہ شیئر کی جا رہی ہیں۔

مظاہرین نے ریلی کی شکل میں الحسین چوک کی طرف مارچ کیا۔ انہوں نے کوڑے کے کنٹینروں میں آگ لگائی اور انہیں سڑکوں پر پھیلا دیا۔ اس موقع پر پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان پرآنسوگیس شیلنگ اور دھاتی گولیوں کا استعمال کیا۔

ادھر جنوبی تہران میں اراک کے مقام پربھی حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔ وہاں پر بھی خامنہ ای مردہ باد اور آمریت مردہ باد کے نعرے لگائے۔