احمدی نژاد کا حسن روحانی سے صدارت سے سبک دوش ہونے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد نے موجودہ صدر حسن روحانی پر زور دیا ہے کہ وہ اقتدار سے سبک دوش ہو جائیں۔

جمعرات کے روز سوشل میڈیا پر جاری ایک وڈیو کلپ میں احمدی نژاد نے حکومتی قرضوں کے حوالے سے روحانی کے بیان کو "جھوٹ" قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ایرانی معیشت تباہی کے دہانے پر کھڑی ہے۔

سابق ایرانی صدر نے مزید کہا کہ انہوں نے عوام کے احترام میں خاموشی اختیار کر لی ہے۔

احمدی نژاد نے بنیاد پرست اور اصلاح پسند حلقوں کے علاوہ ایرانی عدلیہ کے سربراہ صادق لاریجانی اور پارلیمنٹ کے اسپیکر علی رلاریجانی پر الزام عائد کیا کہ یہ سب ملک کو ابتر صورت حال میں دھکیلنے کے عمل میں حکومت کے ساتھ شریک ہیں۔

سابق صدر کا کہنا ہے کہ "پانچ سال پورے ہو گئے۔ اس دوران منظور نظر افراد کو نوازا گیا جب کہ عوام کو کچھ حاصل نہیں ہوا"۔

واضح رہے کہ ملکی نظام کو برقرار رکھنے کے مشترکہ مقصد کے باوجود دسمبر 2017ء میں عوام کے ملک گیر احتجاج کے بعد ایرانی حکام کے درمیان اختلافات کی خلیج گہری ہو گئی ہے۔ گزشتہ ہفتے احتجاجی مظاہروں میں ایرانی عوام نے حکمراں نظام کے خاتمے کے مطالبے سے متعلق نعرے لگائے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں