.

ترکی دیوالیہ ہونے نہیں جا رہا: ایردوآن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے کرنسی کی قدر کے حوالے سے ملک کو درپیش بگڑتی صورت حال کے اثرات کم کرتے ہوئے کہا ہے کہ " ترکی کسی بحران سے دوچار نہیں اور نہ ملک دیوالیہ ہونے کے قریب پہنچا ہے۔

ہفتے کے روز ترکی کے شہر ریزا میں ایردوآن کی جماعت جسٹس اینڈ پِیس کے ایک حلقے سے گفتگو کرتے ہوئے ترکی کے صدر نے کہا کہ کرنسی کا اُتار چڑھاؤ اُس اقتصادی جنگ کے "میزائل" ہیں جس کا ترکی کو اس وقت سامنا ہے۔

ایردوآن نے مزید بتایا کہ ترکی کی حکومت چین ، روس اور یوکرین کے ساتھ تجارتی لین دین مقامی کرنسی میں کرنے کی کوشش کر ہی ہے۔

ایردوآن کا کہنا تھا کہ شرح سود کو نچلی ترین ممکنہ سطح پر لایا جانا چاہیے کیوں کہ یہ استحصال کا آلہ ہے جو غریب کو غریب تر اور امیر کو امیر تر بنا رہا ہے۔

گزشتہ چند ہفتوں کے دوران ترکی کے مرکزی بینک کو شرح سود میں اضافے کے حوالے سے دباؤ کا سامنا کرنا پڑا تا کہ بھاری افراطِ زر اور ملکی کرنسی کی قدر میں کمی کا مقابلہ کیا جا سکے۔