.

دبئی کے پولیس افسر نے کیسے سات ماہ کے بچے کی ماں کو جیل جانے سے بچا لیا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دبئی کے ایک نیک دل پولیس افسر نے سات ماہ کے بچے کی ماں کو جیل جانے سے بچا لیا ہے۔عدالت نے اس عورت کو ایک چیک کیش نہ ہونے کے مقدمے میں سو دن کی جیل کی سزا سنائی تھی مگر وہ دس ہزار اماراتی درہم ( 2700 ڈالرز) ادا کرکے جیل جانے سے بچ سکتی تھی۔اس کا یہ جرمانہ دبئی پولیس کے اس افسر نے ادا کردیا ہے۔

مقامی روزنامے خلیج ٹائمز میں شائع شدہ ایک رپورٹ کے مطابق اس عورت کو جیل جانے سے بچانے والے پولیس افسر لیفٹیننٹ عبدالہادی الحمادی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ وہ اپنی آنکھوں کے سامنے اس عورت کے خاوند کے چیخنے چلانے کی تاب نہیں لا سکے تھے اور انھیں اس سوچ ہی نے پریشان کردیا تھا کہ اس کے شیر خوار بچے کی ماں کے علاوہ کون دیکھ بھال کرے گا۔

رپورٹ کے مطابق یہ عورت ایک مالی مسئلے سے دو چار ہوگئی تھی اور اس نے اپنے خاوند کی کمپنی کی طرف سے ایک چیک پر دستخط کردیے تھے لیکن بنک کھاتے میں اتنی رقم موجود نہیں تھی ۔یہ چیک باؤنس ہونے پر اس کے خلاف مقدمہ دائر کردیا گیا تھا۔

لیفٹیننٹ عبدالہادی کا کہنا ہے کہ ’’ مجھے میرے سینیرز نے لوگوں کی مدد اور ان کے مسائل کے حل کی ذمے داری سونپی تھی۔میں نے جب اس جوڑے کو مصیبت کے عالم میں دیکھا تو میں نے ان کی مدد کا فیصلہ کیا اور میری خواہش اور کوشش تھی کہ یہ عورت جیل نہیں بلکہ اپنے بچے اور خاوند کے ساتھ واپس گھر جائے‘‘۔

رپورٹ کے مطابق پولیس افسر نے اس معاملے کی رازداری کی درخواست کی تھی اور وہ نہیں چاہتے تھے کہ ان کے اس نیک کام کی کسی طرح تشہیر ہو لیکن نجانے کس طرح میڈیا کو اس کی بھنک پڑ گئی اور مقامی پریس سے وابستہ صحافیوں نے ان سے اس کی تفصیل جاننے کے لیے رابطہ کرلیا ۔