طالبان ’جنگ کے خاتمے‘ کے لیے امریکا سے مذاکرات پر تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مُلا ھیبت اللہ کی قیادت میں سرگرم افغان تحریک طالبان نے جنگ کے خاتمے کے لیے امریکا کے ساتھ براہ راست بات چیت پر آمادگی کا اظہار کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق طالبان کی طرف سےعیدالاضحیٰ کی مناسبت سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ وہ جنگ کے خاتمے کے لیے امریکا کے ساتھ براہ راست مذاکرات پر تیار ہیں۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی مذاکرات پر آمادگی ظاہر کریں۔

مذاکرات پرآمادگی کے اعلان کے باوجود طالبان نے امریکا کی افغان پالیسی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکا کا مذاکرات میں شامل ہونے کی تجاویز پیش کرنا مگر افغان جنگ کی ذمہ داری سے راہ فرار اختیار کرنا غیرمنطقی اور غیرعملی ہے۔ اس کے نتیجے میں افغانستان میں مہنگائی میں اضافہ ہوا اورامریکی جنگ میں ناکام ہوئے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اگرامریکا افغانستان میں حقائق کو قبول کرلے تواس کے ساتھ مذاکرات مُمکن ہیں۔ ہم امریکا کی طرف سے معقول اقدام کی توقع رکھتے ہیں۔

طالبان نے امریکا سے جنگ کے بجائے بات چیت پر زور دیا اور کہا ہے کہ طویل جنگ کے خاتمے کا یہ واحد راستہ ہے اور اسی طرح افغانستان پرامریکی تسلط ختم کیا جاسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں