ہوائی جہاز کے انجن نے لڑکا 32 فٹ دور پھینک دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یونان کے ایک ساحلی علاقے میں ہوائی جہاز کے انجن سے خارج ہونے والی طاقتور ہوا کے تھرسٹ نے ایک 12 سالہ برطانوی لڑکا اٹھا کر 32 میٹر دور پھینک دیا۔ معجزانہ طور پر لڑکا مرنے سے بچ گیا مگر اسے شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کرنا پڑا۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق یونان کے جزیرہ ’سکیاتھوس‘ میں ایک 12 سالہ لڑکا اپنے والد کے ہمراہ ہوائی اڈے کے قریب جہازوں کی آمد ورفت دیکھ رہا تھا کہ اس دوران جب ایئربس 320 نے اس کے عین اوپر سے انتہائی قریب سے اڑان بھری جہاز کے انجن سے خارج ہونے والی طاقتور ہوا نے لڑکے کو قریبا دس میٹر دور پھینک دیا۔

یہ ہوائی جہاز یونان سے لندن کے لیے روانہ ہو رہا تھا۔ لڑکا ایک چٹان سے ٹکراتے بال بال بچا اور ریت پر گر کر زخمی ہوگیا تاہم اسے شدید چوٹیں آئیں۔ اگرچہ یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے مگر ماہرین کا کہنا ہے کہ ہوائی جہازوں کے ٹیک آف یا لینڈنگ کے وقت لوگوں کو ان کے انجن اور رن وے سے دور رہنا چاہیے کیونکہ ان کے انجنوں سے خارج ہونے والی طاقت ور ہوا جان لیوا بھی ہوسکتی ہے۔

زخمی ہونے والے برطانوی لڑکے کو ایمبولینس کی مدد سے یونانی شہ فولوس کے اچیلوپولیو اسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں اس کی زندگی خطرے سے باہر بیان کی جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں