.

سینیٹر جان مکین 81 سال کی عمر میں انتقال کر گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دماغ کےسرطان میں مبتلا امریکا کے سرکردہ سیاست دان سینیٹر جان مکین گذشتہ روز انتقال کرگئے۔ ان کی عمر 81 سال تھی۔ وہ گذشتہ برس موسم گرما میں دماغی کینسر کا شکار ہوئے تھے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سینیٹر مکین کے انتقال پر افسوس اور ان کے اہل خانہ سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

جان مکین کو آخری بار کسی سیاسی سرگرمی میں دسمبر 2017ء کو کانگریس کی عمارت میں دیکھا گیا تھا، تاہم وہ سوشل میڈیا بالخصوص ٹویٹر پر سیاسی امور پر اپنے رائے کا اظہار کرتے رہے ہیں۔

جان مکین کو حالیہ برسوں کےدوران ری پبلیکن کا سرگرم لیڈر قرار دیا جاتا رہا ہے۔ سنہ 2008ء میں انہوں نے ڈیموکریٹس کے باراک اوباما کے مقابلے میں صدارتی انتخابات میں بھی حصہ لیا تھا۔ ری پبلیکن پارٹی سے تعلق کے باوجود جان مکین کھل کرصدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیوں پر تنقید کرتے رہے ہیں۔

آنجہانی امریکی سینیٹر مکین امریکی فضائیہ کے پائلٹ اور ویت نام میں جنگی قیدی اور 35 سال تک امریکی سیاست میں رہے۔ جان مکین 29 اگست 1936 کو پیدا ہوئے۔ ان کے والد امریکی نیوی میں کمانڈر اور دادا ایڈمرل تھے۔ جان مکین نے اپنے آباء واجداد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے فوج میں شمولیت اختیار کی اور لڑاکا طیارے کے پائلٹ بن گئے۔

یاد رہے 26 اکتوبر 1967کو ہنوئی میں ان کے طیارے کو میزائل سے نشانہ بنایا گیا تو میک کین شدید زخمی ہو گئے مگر جان بچانے میں کامیاب ہو گئے۔ انہیں جنگی قیدی بنا لیا گیا اور 15 مارچ 1973 کو انہیں رہا کیا گیا۔