.

ایران عالمی کپ 2022ء کے تعمیراتی منصوبوں میں قطر سے حصے داری کا خواہاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران قطر میں 2022ء میں ہونے والے عالمی کپ فٹ بال ٹورنا منٹ کے ترقیاتی منصوبوں میں اپنی حصے داری کا خواہاں ہے اور اس سلسلے میں ایرانی صدر حسن روحانی نے امیرِ قطر شیخ تمیم بن حمد آل ثانی سے اتوار کے روز ٹیلی فون پر تبادلہ خیال بھی کیا ہے۔

صدر روحانی نے انھیں مطلع کیا تھا کہ ایرانی کمپنیاں قطر کو ٹیکنیکل اور انجنئیرنگ کی خدمات برآمد کرنے کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں۔بالخصوص وہ فیفا عالمی کپ کے انعقاد کے لیے زیر تعمیر منصوبوں میں شراکت داری کو تیار ہیں۔

ایرانی خبررساں ایجنسی تسنیم کے مطابق صدر حسن روحانی نے گفتگو میں ایرانی کاروباری افراد اور سرمایہ کاروں کی سرگرمیوں کو سہولت بہم پہنچانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

انھوں نے 2015ء میں ایران اور چھے بڑی طاقتوں کے درمیان طے شدہ جوہری سمجھوتے کی حمایت میں یورپ ، روس ، چین ، ترکی اور قطر کے اختیار کردہ سیاسی موقف کو سراہا ہے اور کہا ہے کہ اس حمایت اور امریکا کی غیر قانونی پابندیوں کی مخالفت کو عملی جامہ بھی پہنایا جانا چاہیے اور اس سلسلے میں عملی اقدامات کیے جانے چاہییں۔

امیر ِ قطر نے اس کے جواب میں ایران کے ساتھ تمام شعبوں میں تعلقات کو مزید فروغ دینے پر آمادگی ظاہر کی ہے۔انھوں نے جوہری سمجھوتے کی شرائط کی خلاف ورزیو ں کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ دوحہ تہران کے ساتھ مضبوط تعلقات کا خواہاں ہے اور وہ سیاسی تنازعات کے پُرامن حل کا حامی ہے۔