.

افغانستان میں دوبارہ منظم ہونے والے داعش سے’’ حقیقی خطرہ ‘‘ درپیش ہے : برطانیہ کا انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ نے خبردار کیا ہے کہ عراق اور شام میں شکست خوردہ انتہا پسند اور جنگجو اب افغانستان میں دوبارہ منظم ہورہے ہیں اور وہ حملوں کی تیاری کررہے ہیں۔وہ برطانیہ سمیت دنیا کے مختلف حصوں میں حملے کرسکتے ہیں۔

برطانیہ کے وزیر دفاع گاوین ولیم سن نے سکائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے یہ انتباہ جاری کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کے ملک اور دوسری یورپی ریاستوں کو افغانستان میں موجود داعش کے انتہا پسند جنگجوؤں کی جانب سے دھمکیاں دی جارہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’ ہم نے جو کچھ دیکھا ہے ، وہ یہ کہ برطانیہ کو ان گروپوں سے حقیقی خطرہ درپیش ہے ۔ہمیں اقدامات کرنا ہوں گے اور اس بات کو یقینی بنانا ہوگا کہ مستقبل میں مانچسٹر طرز کا کوئی واقعہ دوبارہ رونما نہ ہو‘‘۔

برطانوی وزیر دفاع نے کہا کہ ’’ ہم نے افغانستان میں برسرپیکار دہشت گرد گروپوں پر مستقل طور پر نظر رکھی ہوئی ہے اور ان کے نہ صرف برطانیہ بلکہ پورے برِّ اعظم یورپ میں روابط کے شواہد کو بھی ملاحظہ کیا ہے‘‘۔