.

سعودی عدالتوں میں ماہانہ 72 ہزار درخواستیں دائر،4.5 ارب ڈالرز مالیت کے جرمانے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی وزارت انصاف کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق متلک بھر میں عدالتوں میں ماہانہ 72 ہزار سے زیادہ درخواستیں دائر کی جارہی ہیں ۔یہ تعداد گذشتہ سال اسی عرصے میں ایک ماہ میں دائر کردہ درخواستوں کی تعداد سے 32 فی صد زیادہ ہے۔

ان درخواستوں میں دلا پانے کے دعووں کی مالی قدر ساڑھے چار ارب ڈالرز ( 17 ارب سعودی ریا ل) ہے۔مالی لین دین اور جرمانوں کے نفاذ سے متعلق درخواستوں کی تعداد 97 فی صد ہے۔

بڑے شہروں میں عدالتوں میں مالی لین دین کی شکایات اور دوسرے مقدمات بھی سب سے زیادہ تعدادمیں دائر کیے جاتے ہیں۔ جیسے مکہ مکرمہ میں ان کی تعداد 22 ہزار ، دارالحکومت الریاض میں 19 ہزار سے زیادہ اور مشرقی صوبے میں ایک ماہ میں دائر کیے جانے والے مقدمات کی تعداد 10 ہزار ہے۔یہ کل دائر کردہ درخواستوں کی تعداد کا 73 فی صد ہیں۔

سعودی عدالتوں میں روزانہ اوسطاً 2804 سے 5041 تک درخواستیں دائر کی جاتی ہیں۔درخواست گزار اپنے قومی شناختی کارڈ کو استعمال کرتے ہوئے وزارت انصاف کے آن لائن پورٹل سے بھی اپنی درخواست پر عمل درآمد کی کیفیت کے بارے میں جان سکتے ہیں۔

اسی طرح جن مدعاعلیہان کے خلاف کیس دائر کیے جاتے ہیں ، وہ بھی اس پورٹل سے اپنے خلاف درخواستوں اور عاید کردہ جرمانوں کی وجہ جواز کے بارے میں معلوم کر سکتے ہیں۔