.

پی ٹی آئی کے امیدوار ڈاکٹر عارف الرحمان علوی پاکستان کے نئے صدر منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی حکمراں جماعت تحریک انصاف ( پی ٹی آئی) کے امیدوار ڈاکٹر عارف الرحمان ملک کے تیرھویں صدر منتخب ہوگئے ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے پارلیمان کے دونوں ایوانوں قومی اسمبلی ، سینیٹ اور چاروں صوبائی اسمبلیوں پر مشتمل صدارتی انتخاب کے لیے قائم الیکٹورل کالج سے سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے ہیں۔الیکشن کمیشن کے جانب سے اعلان کردہ ابتدائی غیر حتمی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے صدارتی امیدوار نے 352 ووٹ حاصل کیے ہیں۔ان کے مدمقابل مسلم لیگ نواز اور حزب اختلاف کی دوسری جماعتوں کے حمایت یافتہ متحدہ مجلس عمل کے امیدوار مولانا فضل الرحمان نے 185 ووٹ لیے ہیں اور تیسرے صدارتی امیدوار پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار چودھری اعتزاز احسن کےحق میں سب سے کم 123 ووٹ پڑے ہیں۔

نئے صدر کے انتخاب کے لیے قومی اسمبلی ، سینیٹ کے ارکان نے پارلیمان ہاؤس میں اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔ چارو ں صوبائی اسمبلیوں کے ارکان نے صوبائی دارالحکومتوں میں اپنی اپنی اسمبلی میں اپنا حق رائے دہی استعمال کیا ہے ۔ ووٹنگ کا عمل منگل کی صبح دس بجے شروع ہوا تھا اور بغیر کسی وقفے کے سہ پہر چار بجے تک جاری رہا۔

صدارتی انتخاب میں پارلیمان کے ہر رکن کا ایک ووٹ شمار کیا جاتا ہے ۔پارلیمان میں کل ڈالے گئے 446 ووٹوں میں سے ڈاکٹر عارف علوی نے 212 ، مولانا فضل الرحمان نے 131 اور چودھری اعتزاز احسن نے 81 ووٹ حاصل کیے ہیں۔ پی ٹی آئی کے امیدوار نے چاروں صوبائی اسمبلیوں میں بھی سب سے زیادہ 140 ووٹ حاصل کیے ہیں۔

واضح رہے کہ چاروں صوبائی اسمبلیوں میں صوبہ بلوچستان کی اسمبلی کے ارکان کی تعداد سب سے کم 65 ہے۔اس کے ہر رکن کا ایک ووٹ شمار کیا جاتا ہے مگر باقی تین صوبائی اسمبلیوں کے ارکان کی تعداد اس سے زیادہ ہے ۔ان سب کے برابر ووٹ شمار کرنے کے لیے ان تینوں اسمبلیوں کے ہر رکن کے ووٹ کی قدر اس تناسب سے کم کردی جاتی ہے۔ان تینوں اسمبلیوں میں ڈالے گئے ووٹوں کو 65 سے ضرب دے کر ان کے ارکان کی کل تعداد سے تقسیم کیا جاتا ہے۔اس طرح ان کے ایک رکن کے ووٹ کی قدر وضع کی جاتی ہے۔اس فارمولے کے تحت صدارتی انتخاب میں اس مرتبہ صوبہ سندھ اسمبلی کے ایک رکن کے ووٹ کی قدر 0.387، پنجاب اسمبلی کے رکن کی 0.175 اور صوبہ خیبر پختونخوا کے ایک رکن کے ووٹ کی قدر 0.524 ہے۔

الیکشن کمیشن نے صدارتی انتخاب کا عمل مکمل ہونے کے بعد تینوں صدارتی امیدواروں یا ان کے ایجنٹوں کو بدھ کو اپنے سیکریٹریٹ میں طلب کیا ہے اور ان کی موجودگی میں ووٹوں کی پھر سے گنتی کے بعد حتمی انتخابی نتائج کا اعلان کیا جائے گا۔

نومنتخب صدر ڈاکٹر عارف علوی 9 ستمبر کو موجودہ صدر ممنون حسین کی پانچ سالہ آئینی مدت پوری ہونے کے بعد اپنا عہدہ سنبھالیں گے۔ انھوں نے اپنے انتخاب کے بعد کہا ہے کہ ’’اب میں صرف پی ٹی آئی نہیں بلکہ پوری قوم اور تمام جماعتوں کا صدر ہوں ۔ہر جماعت کا مجھ پر برابر کا حق ہوگا‘‘۔انھوں نے صدر کے عہدے کے لیے امیدوار نامزد کرنے پر وزیراعظم اور پی ٹی آئی کے چئیرمین عمران خان کا شکریہ ادا کیا ہے۔