.

علی خامنہ ای ترکی کے گُن گاتے ہوئے تعاون وسیع کرنے کے خواہاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کے رہبرِ اعلی علی خامنہ ای نے جمعے کے روز ترکی اور روسی کے صدور کے ساتھ الگ الگ ملاقاتیں کیں۔

اس موقع پر ترکی کے قریب آنے کی کوشش کرتے ہوئے خامنہ ای کا کہنا تھا کہ "ایران اور ترکی خطّے میں دو طاقت ور ریاستیں ہیں اور دونوں ہی اسلامی دنیا کے لیے متبادل محرّکات رکھتے ہیں۔ لہذا دونوں ملکوں کو چاہیے کہ سیاسی اور اقتصادی میدان میں اپنے تعاون کو پہلے سے زیادہ وسیع کریں"۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی فارس کے مطابق علی خامنہ ای نے جمعے کے روز روسی صدر ولادی میر پوتین کے ساتھ ملاقات میں کہا کہ ایران اور روس مل کر امریکا پر روک لگانے کے واسطے کام کر سکتے ہیں۔

پوتین جمعے کے روز ایران اور ترکی کے صدور کے ساتھ تین ملکی سربراہ اجلاس میں شرکت کے لیے تہران پہنچے تھے۔ یہ اجلاس شام میں اپوزیشن کے آخری بڑے گڑھ اِدلب صوبے کی صورت حال کے حوالے سے تھا۔