.

تصاویر کے آئینے میں : پیرس کی سڑکیں گاڑیوں کے بغیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں اتوار کے روز دارالحکومت پیرس کو قریبا مکمل طور پر گاڑیوں اور موٹر بائیکوں سے خالی کر کے اُس کی سڑکوں کو پیدل چلنے والوں کے لیے مختص کر دیا گیا۔

گرینچ کے وقت کے مطابق صبح نو بجے سے شام چار بجے تک "کار فری زون" کے سلسلے میں عائد پابندی میں بعض سواریوں کو مستثنی قرار دیا گیا تھا۔ ان میں ہنگامی حالات کی گاڑیاں، معذور افراد کی گاڑیاں، سیاحوں کی گاڑیاں اور ٹیکسیاں شامل تھیں۔

پیرس کی میونسپلٹی نے اپنی ویب سائٹ پر بتایا کہ اس اقدام کا مقصد "مقاماتِ عامّہ کو کم آلودہ اور زیادہ راحت و سکون والا بنانا" ہے۔

پیرس کی میونسپلٹی کئی برسوں سے شہر میں فضائی آلودگی پر روک لگانے کی کوشش کر رہی ہے۔ میونسپلٹی نے جمعے کے روز اعلان کیا تھا کہ شہر کا تاریخی وسطی علاقہ 7 اکتوبر سے ہر ماہ کی ایک اتوار کو گاڑیوں کے لیے بند کیا جائے گا

پیرس میونسپلٹی کے مطابق 2017ء اور 2018ء میں فرانس کے دارالحکومت میں گاڑیوں کے کی نقل و حرکت میں 6% کی ریکارڈ کمی دیکھنے میں آئی۔ اس دوران فضائی آلودگی میں بھی "مماثل تناسب" سے کمی واقع ہوئی۔