.

طرابلس میں گھمسان کی لڑائی، شہری آبادی پر اندھا دھند راکٹ حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کے دارالحکومت پر قبضے کے لیے دو متحارب فریقین کے درمیان گھمسان کی جنگ جاری ہے۔ فریقین کی طرف سے شہری آبادی پر اندھا دھندد راکٹ حملے اور شدید گولہ باری کی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق طرابلس کے جنوب میں آج مسلسل تیسرے روز بھی جنگ جاری ہے۔ عالمی طور پر تسلیم شدہ قومی وفاق حکومت کے زیرانتظام وزرات صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کے روز طرابلس میں لڑائی کے نتیجے میں 9 شہری جاں بحق اور 13 زخمی ہوگئے تھے۔

حکام کا کہنا ہے کہ کئی علاقوں میں رابطہ ممکن نہیں ہوسکا جس کی وجہ سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ لڑائی اور فائرنگ کے اندر سے 300 خاندان جانیں بچا کر محفوظ مقامات پر منتقل ہوگئے ہیں۔

نامہ نگاروں کے مطابق عالمی سطح پر تسلیم کی گئی لیبیا کی قومی وفاق حکومت طرابلس میں جنگجوؤں کو قابو کرنے میں ناکام ہے۔ لیبیا کی حکومت اور باغیوں کے درمیان چھ ستمبر کو اقوام متحدہ کی زیرنگرانی جنگ بندی معاہدہ ہوا تھا مگر یہ معاہدہ دیر پا ثابت نہیں ہوسکا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ جمعرات کو دارالحکومت طرابلس میں مسلسل میزائل اور راکٹ حملوں کے ساتھ ایک دوسرے پر توپ خانے سے شدید گولہ باری ہوتی رہی ہے۔ شاہراء صلاح الدین، شاہراہ السبع، عین زارہ اور متعدد دیگر مقامات پر شہری آباد کو نشانہ بنایا گیا اور بڑی تعداد میں راکت شہری آبادی پر گرے ہیں۔