.

اریٹریا اور ایتھوپیا میں جامع امن معاہدہ طے کرانے پر شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اریٹریا اور ایتھوپیا میں امن ، دوستی اور تعاون کے فروغ کے لیے جامع معاہدہ طے کرانے میں سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے کردار کو سراہا ہے۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے زیر نگرانی 16 ستمبر کو اریٹریا اور ایتھوپیا کے درمیان جدہ میں یہ تاریخی امن معاہدہ طے پایا تھا۔ اس پر اریٹریا کے صدر أسياس أفورقی اور ایتھوپیا کے وزیراعظم ابی احمد نے دست خط کیے تھے۔ اس امن معاہدے سے ایتھوپیا اور اریٹریا کے درمیان گذشتہ بیس سال سے جاری جنگ کا خاتمہ ہوجائے گا۔

دونوں لیڈروں نے اس کے علاوہ ایک دوسرے کے دارالحکومت میں اپنے اپنے سفارت خانے کھولنے ، پروازوں کی بحالی اور ایتھوپیا کو اریٹریا کی بندرگاہیں استعمال کرنے کی اجازت دینے سے متعلق سمجھوتوں پر بھی دست خط کیے تھے ۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ارکان نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’یہ پیش رفت تاریخی سنگِ میل کی عکاس ہے۔اس کے ہارن آف افریقا اور اس سے ماورا دور رس مثبت اثرات مرتب ہوں گے‘‘۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق سلامتی کونسل کے رکن ممالک نے اس طرح کی کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا ہے اور کہا ہے کہ تعاون کا ایک نیا باب وا ہونے کے بعد خطے میں امن ، استحکام اور خوش حالی کو یقینی بنایا جاسکے گا۔

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹیریس نے بھی ایتھوپیا اور اریٹریا کے درمیان سعودی عرب کی کامیاب مصالحتی کوششوں کو سراہا ہے۔انھوں نے جنرل اسمبلی کے تہترویں سالانہ اجلاس سے چند روز قبل ایک نیوزکانفرنس میں دونوں ممالک کے لیڈروں کے دوطرفہ تعلقات کی بحالی کے لیے ایک نیا باب وا کرنے کے ویژن کی بھی تعریف کی ہے اور سعودی عرب کا ان کے درمیان معاہدے میں سہولت کاری پر شکریہ ادا کیا ہے۔

انھوں نے یمن کی صورت حال پر گفتگو کرتے ہوئے کہا:’’ ہم نے یمنی حوثیوں کی جانب سے سعودی عرب میں شہری اہداف پر میزائل حملوں کی بار بار مذمت کی ہے ۔اس ضمن میں ہمارا کردار بڑا واضح ہے‘‘۔