.

قاسم سلیمانی کو نشانہ بنا کر اس کے شر پسند منصوبوں سے نمٹ لیں گے : بولٹن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی قومی سلامتی کے مشیر جون بولٹن نے ایران پر عائد کردہ امریکی پابندیوں کو غیر مؤثر بنانے کی یورپی یونین کی پالیسی کومسترد کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایرانی تیل کی درآمدات پرعائد کردہ امریکی پابندیوں کو غیر مؤثر کرنے والے کامیاب نہیں ہوں گے۔ بولٹن کا کہنا تھا کہ بعض ملکوں کے قول و فعل میں کھلا تضاد ہے۔

منگل کے روز نیویارک میں ایک ایران مخالف کانفرنس سے خطاب میں بولٹن نے زور دے کر کہا کہ "ہم خامنہ ای کو مشرق وسطی کے ممالک برباد کرنے نہیں دیں گے۔ ہم ایران کے سینئر عہدے داروں کو نشانہ بنائیں گے جس میں قاسم سلیمانی شامل ہے۔ ہم اس کی جانب سے عمل میں لائے جانے والے شرپسندی کے تمام منصوبوں سے نمٹ لیں گے"۔

بولٹن کے مطابق امریکا پوری قوت اور عزم کے ساتھ ایران پر اقتصادی پابندیاں عائد کرے گا۔ انہوں نے باور کرایا کہ یورپی یونین یا دنیا کی کسی دوسری قوت کو ایران پر پابندیاں غیر مؤثر بنانے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

امریکی قومی سلامتی کے مشیر نے دوٹوک انداز میں واضح کر دیا کہ "ہم ایسی سرمایہ کاری نہیں ہونے دیں گے جس سے ایران کو اپنی تیل کی صںعت کو ترقی دینے کا موقع ملے۔ ہم تہران کے کے لیے مشکلات کا پہاڑ کھڑا کر دیں گے"۔

خیال رہے کہ امریکا نے ایران کے ساتھ 2015ء میں طے پائے جوہری سمجھوتے سے علاحدگی کا اعلان کرنے کے بعد ماضی میں عائد کردہ اقتصادی پابندیاں اٹھا لی تھیں۔