.

یمنی فوج کی الحدیدہ میں پیش قدمی جاری، حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں پر نئے حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج نے الحدیدہ کی گورنری کے جنوبی علاقوں میں حوثی ملیشیا کے خلاف لڑائی میں پیش قدمی جاری رکھی ہوئی ہے ۔العربیہ نیوز چینل کے نمایندے کی رپورٹ کے مطابق یمنی فوج نے زبید اور اس کے نزدیک واقع الجراحی کی نظامت میں حوثیوں کی بیرکوں اور ٹھکانوں پر نئے حملے کیے ہیں۔

عرب اتحاد نے بھی اسی علاقے میں حوثیوں کی مدد کو آنے والی کمک کو فضائی حملوں میں نشانہ بنایا ہے جس کے نتیجے میں ان کا بھاری جاری نقصان ہوا ہے۔یمنی فوج نے گذشتہ جمعہ کو الحدیدہ کے مشرق میں واقع ایک فضائی دفاعی کیمپ پر قبضے کا اعلان کیا تھا۔

یمنی فوج کی ایلیٹ بریگیڈز نے کہا تھا کہ اس کے یونٹوں نے الحدیدہ کے مشرق میں کیلو 16 کے علاقے میں اس دفاعی کیمپ کے علاوہ اس کے آس پاس میں واقع فارموں پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔

قبل ازیں عرب اتحاد نے الحدیدہ کی آزادی کے لیے فوجی کارروائی دوبارہ شروع کرنے کا اعلان کیا تھا اور اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے گذشتہ سوموار کو یمنی دارالحکومت صنعاء اور الحدیدہ کی بندرگاہ کے درمیان انسانی امداد بہم پہنچانے کے لیے نئی راہ داریاں کھولنے کا اعلان کیا تھا ۔

عرب اتحاد نے اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ یہ نئی راہ داریاں اقوام متحدہ کے ساتھ ایک سمجھوتے کے تحت کھولی جارہی ہیں اور ان کا مقصد صنعا ء کے مکینوں کو درپیش مسائل اور مشکلات کا ازالہ کرنا ہے۔

دریں اثناء متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے امور خارجہ انور قرقاش نے کہا ہے کہ ان کا ملک یمن میں جاری بحران کے خاتمے کے لیے نئے امن مذاکرات سے متعلق اقوام متحدہ کی تجاویز کی حمایت کرے گا۔