.

سعودی عرب اور جرمنی کا سفارتی تعطل ختم کرنے کی کوششیں

سعودی سفیر کی جلد برلن واپسی کے لیے پرامید ہیں:جرمنی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب اور جرمنی نے کئی ماہ سے جاری سفارتی تعطل ختم کرنے کی کوششیں تیز کردی ہیں۔ جرمن وزارت خارجہ نے توقع ظاہر کی ہے کہ سعودی عرب جلد ہی اپنا سفیر برلن بھیج دے گا۔

یہ پیش رفت منگل کے روز نیویارک میں جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع دونوں ملکوں کی وزراء خارجہ ملاقات کے بعد سامنے آئی ہے۔ منگل کے روز ہونے والی ملاقات میں دونوں وزراء خارجہ نے باہمی تعلقات کی اہمیت کا اعتراف کرتے ہوئے کہا تھا کہ برلن اور ریاض کے درمیان کوئی کشیدگی نہیں۔

منگل کو سعودی وزیرخارجہ عادل الجبیرنے اپنے جرمن ہم منصب ھایکو ماس سے ملاقات کی تھی۔ دونوں رہ نماؤں نے ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس سے بھی خطاب کیا۔

کل بدھ کو اسی تناظر میں جرمن وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ سعودی عرب خطے میں جرمنی کا اہم اتحادی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی وزیر خارجہ نے جرمن وزیرخارجہ ہایکو ماس کو ریاض کے دورے کی دعوت بھی دی ہے۔ منگل کو سعودی عرب نے جرمن وزیر خارجہ کے باہمی تعلقات کو مزید مضبوط کرنے اور سفارتی روابطہ بحال کرنے کے بیان کا خیر مقدم کیا تھا۔

جرمن وزیرخارجہ نے نیویارک میں ایک پریس کانفرنس میں اعتراف کیا تھا کہ سعودی عرب کے ساتھ سفارتی تعطل محض غلط فہمی کانتیجہ تھا اور اس پر برلن کو بہت افسوس ہے۔