.

پاسداران انقلاب نے 1986ء میں ایرانی حجاج کے سامان میں دھماکا خیز مواد کس طرح رکھا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں ملا احمد منتظری نے 1986ء میں ایرانی حجاج کے سامان میں دھماکا خیز مواد رکھنے کے حوالے سے ایرانی پاسداران انقلاب کے بنیادی کردار کا انکشاف کیا ہے۔ احمد منتظری متوفی شیعہ مرجع آیت اللہ حسین علی منتظری کے بیٹے ہیں۔ حسین منتظری ایرانی انقلاب کے سرخیل خمینی کے نائب تھے۔ بعد ازاں انہیں نظربند کر دیا گیا تھا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ اس خبر کے ساتھ ایک وڈیو کلپ بھی منسلک کر رہا ہے جس میں احمد منتظری 32 برس قبل پیش آنے والے واقعے پر گفتگو کر رہے ہیں۔

ایران کے چینل فور کے زیر انتظام سیٹلائٹ چینل "کلمہ" کی ویب سائٹ کے مطابق حسین علی منتظری کے اہل خانہ نے ایک ٹی وی پروگرام میں حسین دہباشی کے بیان پر سخت احتجاج کیا تھا۔ دہباشی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ 1986ء میں ایرانی حجاج کے سامان میں دھماکا خیز مواد رکھنے میں سید مہدی ہاشمی (حسین علی منتظری کے قریبی عزیز) ملوث ہیں۔ منتظری کے اہل خانہ نے اپنے بیان میں مذکورہ کارروائی میں ایرانی پاسداران انقلاب کے کردار کی تصدیق کی تھی۔ بیان میں بتایا گیا کہ "سید مہدی ہاشمی نے ایرانی پاسداران میں اپنی ذمّے داریاں 1983ء تک انجام دی تھیں جب کہ حجاج کے سامان میں دھماکا خیز مواد کی کھیپ رکھنے کا واقعہ ہاشمی کے اپنے منصب کو چھوڑ دینے کے بعد 1986ء میں پیش آیا"۔

بیان میں متوفی حسین علی منتظری کے ایک خط کو بنیاد بنایا گیا جو انہوں نے اُس وقت کے ایرانی رہبر اعلی خمینی کے نام تحریر کیا تھا۔

مذکورہ خط میں منتظری نے لکھا کہ "پاسداران انقلاب نے حج سیزن میں ایک ناقابل قبول غلطی کا ارتکاب کیا۔ انہوں نے 100 عمر رسیدہ ایرانی حجاج (خواتین اور مرد) کے علم میں لائے بغیر ان کے سامان کا ناجائز استعمال کیا۔ پاسداران نے سعودی عرب اور حج کے سیزن میں ایران اور ایرانی انقلاب کی عزّت خاک میں ملا دی۔ اس کے نتیجے میں مہدی کروبی (حجاج کے امور سے متعلق خمینی کے مندوب کی حیثیت سے) شاہ فہد سے معافی مانگنے پر مجبور ہو گئے"۔

منتظری نے خط میں خمینی کو اس امر پر بھی مطلع کیا کہ "اس کارروائی کے ایک ناظم نے مجھے بتایا کہ پاسداران انقلاب کے ایک عہدے دار کا اصرار ہے کہ ہم مہدی ہاشمی کو اس تمام کارروائی کا موردِ الزام ٹھہرائیں"۔

یاد رہے کہ سعودی عرب کے سکیورٹی اہل کاروں نے 1986ء میں حج سیزن کے دوران ایرانی حجاج کے سامان سے دھماکا خیز مواد کی کھیپ برآمد کی تھی"۔