.

اقوام متحدہ کا طیارہ سابق یمنی صدر صالح کے دو بیٹوں کو لے کر صنعاء سے روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں باغی حوثی ملیشیا نے ایک اعلان میں بتایا ہے کہ سابق صدر علی عبداللہ صالح کے دو بیٹوں صلاح اور مدین کو رہا کر دیا گیا ہے۔

سیاسی ذرائع کا کہنا ہے کہ رہائی کی کارروائی سلطنتِ عُمان کی وساطت سے عمل میں آئی ہے۔

دوسری جانب صنعاء ایئرپورٹ پر ایئر نیوی گیشن کے ذرائع نے "الحدث" نیوز چینل سے گفتگو کرتے ہوئے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ اقوام متحدہ کا ایک طیارہ علی عبداللہ صالح کے دونوں بیٹوں کو اردن کے دارالحکومت عَمّان پہنچانے کے لیے روانہ ہو گیا۔ یہ طیارہ آج کسی وقت صنعاء پہنچا تھا۔

حوثی ملیشیا نے سابق صدر کے بھتیجے کرنل محمد محمد عبداللہ صالح اور سابق صدر کے ایک دوسرے بھتیجے عفّاش طارق صالح کو رہا کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ عفّاش صالح سابق صدر کے خصوصی محافظین کا چیف رہ چکا ہے۔