افغان دو شیزہ موسیقارہ سے کروڑ پتی کیسے بنیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

افغانستان کا نام لیتے ہی ذہن میں ایک ایسے ملک کا تصور ابھرتا ہے جہاں ہرطرف غربت کا عالم ہے مگرافغانستان کے فرسودہ معاشرے میں ایسے کامیاب لوگ بھی موجود ہیں جو اپنی محنت کے بل پرترقی کی منازل طے کرتے ہوئے کامیاب کاروباری لوگوں میں شامل ہوئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے افغانستان کی ایک کامیاب نوجوان کاروباری دوشیزہ کے بارے کا احوال بیان کیا ہے۔

یہ کامیاب کاروباری شخصیت غزل سادات ہیں جن کا شہرہ افغان معاشرے سے نکل پر چار دانگ عالم میں پھیل چکا ہے۔

غزل سادات نے اپنا کیریئر شوبز کے شعبے سے کیا۔ افغانستان جیسے قدامت پسند معاشرے میں کسی خاتون کا موسیقی اور شوبز کے میدان میں نکلنا کانٹوں پر چلنے کے مترادف ہے مگر غزل نے اس میدان میں بھی اپنی مہارت کا لوہا منوایا۔

اب غزل سادات شوبز میں شہرت حاصل کرنے کے بعد کاروباری میدان میں بھی معروف شخصیت ہیں۔ اس کی دولت کا اندازہ 10 ملین ڈالر لگایا گیا۔ افغانستان کے غریب ملک میں کسی خاتون کا اتنی تیزی کے ساتھ تجارتی میدان میں ترقی کرنا قابل رشک مثال ہے۔

غزل دارالحکومت کابل میں پیدا ہوئیں۔ اس کے والدین بھی افغانی ہیں مگر ان کا خاندانی پس منظر ھرات صوبے سے ہے۔ البتہ غزل نے اپنی ابتدائی تعلیم ترکی کے شہر استنبول سے حاصل کی۔ وہاں سے وہ تعلیم کے اگلے مراحل کے لیے کینیڈا چلی گئیں۔ اس نے مونٹریال شہر میں ’ڈینٹیل میڈیسن' کی شاخ سے کورس کیا۔

'وائس آف امریکا' سے بات کرتے ہوئے اس نے سادات نے کہا کہ وہ شوبز کے ساتھ ساتھ کاروباری سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتی ہیں۔ ان دنوں غزل سادات دبئی میں مقیم ہیں اور وہیں پراپنی کاروباری اور تجارتی سرگرمیوں پرکام کررہی ہیں۔ اس نے ”ھٹل کبانہ" کے نام سے ایک ہوٹل قائم کیا ہے۔ اس منصوبے پر اس نے 30 لاکھ ڈالر خرچ کیے ہیں۔ وہ اپنے اگلے پانچ سال تک اپنے ہوٹل کی شاخوں کی تعداد 20 کرنا چاہتی ہیں۔ اس نے بتایا کہ اس کی ثروت ایک کروڑ ڈالر ہے۔ وہ کبانہ ہوٹل میں آکسیجن سازی میں بھی سرمایہ کاری کرنا چاہتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں