امریکی نائب صدر کے الزامات بلا جواز اور بے ہودہ ہیں: چین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

چین نے امریکی انتخابات میں مداخلت کے حوالے سے امریکی نائب صدر مائیک پینس کے بیجنگ پر لگائے گئے الزامات کو مسترد کر دیا ہے۔

چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان ہوا شون یینگ نے جمعے کے روز جاری ایک بیان میں امریکی الزامات کو "بلا جواز" اور "بے ہودہ" قرار دیا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ "ہم امریکا سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنی مرتکب غلطی درست کرے، چین پر بے بنیاد الزامات عائد کرنے اور اس کی ساکھ خراب کرنے کا سلسلہ بند کرے اور چین کے مفادات کو اور امریکا کے ساتھ تعلقات کو نقصان پہنچانا روک دے"۔

مائیک پینس نے جمعرات کے روز اپنے خطاب میں امریکی انتخابات میں چین کی مداخلت کا دعوی کرتے ہوئے بیجنگ پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ امریکی صدر کی تبدیلی کے لیے کوشاں ہے۔

واشنگٹن میں ایک ادارے میں اپنے خطاب کے دوران پینس کا کہنا تھا کہ "صدر (ڈونلڈ) ٹرمپ کی صدارت کامیاب ہے۔ چین ان کے سوا کوئی دوسرا صدر چاہتا ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ چین امریکی جمہوریت میں مداخلت کر رہا ہے"۔

پینس نے اپنے موقف کی حمایت میں امریکی میڈیا میں چینی اشتہارات کو پیش کیا جن میں محصولات کا ہدف بنائے گئے سامان کے تعین کے سلسلے میں سیاسی طور پر تزویراتی ریاستوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ یہ پیش رفت ٹرمپ کی جانب سے چینی مصنوعات پر کسٹم محصولات کے جواب میں سامنے آ رہی ہے۔

امریکی اتنظامیہ کی جانب سے چین پر یہ نکتہ چینی ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب کہ اس بات کی تحقیقات جاری ہیں کہ آیا ٹرمپ کی انتخابی مہم نے روس کے ساتھ ساز باز کی تھی تا کہ 2016ء میں ہونے والے انتخابات کا فیصلہ اپنے حق حاصل کیا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں