بھارت میں بندر سے بس چلوانے کا واقعہ عوام و خواص کی توجہ کا مرکز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارت میں ایک بس ڈرائیور کو بندر سے بس ’چلوانے‘ پر ملازمت سے معطل کر دیا گیا ہے۔

سرکاری روڈ ٹرانسپورٹ کوآپریشن کے مطابق یہ واقعہ پیر کو پیش آیا، جبکہ انھیں اس بارے میں ویڈیو کے وائرل ہونے کے بعد معلوم ہوا۔

عینی شاہدین کے مطابق یہ بندر ایک اور مسافر کے ہمراہ بس پر چڑھا لیکن اس نے کہیں اور بیٹھنے سے انکار کیا اور بس کے شروع میں بیٹھنا چاہا۔

ڈرائیور جس کا نام ایم پراکاش ہے کو اس سب سے کوئی فرق نہیں پڑا اور اس نے اپنے نئے دوست کو سٹیئرنگ پر بیٹھنے دیا اور سفر شروع کر دیا۔

ڈرائیور پراکاش نے پورا وقت اپنا ایک ہاتھ سٹیئرنگ پر ہی رکھا، اور اگر بندر کی بات کی جائے تو اس نے اپنی تمام تر توجہ سڑک پر رکھی۔

رپورٹس کے مطابق آخرکار بندر اپنی منزل تک پہنچا اور آگے کے سفر کے لیے ڈرائیور کے حوالے کر گیا۔

جنوبی ریاست کرناٹکا میں اس بس پر سوار 30 یا اس سے زائد مسافروں میں سے کسی ایک نے بھی اس ڈرائیور کے خلاف شکایت نہیں کی۔

تاہم جب قدرے پرسکون اور بظاہر ماہر لنگور بندر کی بس چلاتے ہوئے ویڈیو وائرل ہوئی تو بس ڈرائیوروں کے مالکان نے ایکشن لیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ ’کسی بندر کو سٹیئرنگ پر بٹھا کر مسافروں کی زندگیوں کو خطرے میں نہیں ڈالا جا سکتا۔‘

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں