امریکی یو این مندوب کے لئے مصری نژاد دینا پاول کا نام تجویز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے وہ اقوام متحدہ میں امریکا کے مستقل مندوب کے عہدے کے لیے خاتون سفارت کار دینا پاول کے نام پر غور کر رہے ہیں۔ دینا پاول بنک گولڈ مین سیکس میں ایگزیکٹو کےعہدے پر کام کرنے کے ساتھ ماضی میں وائیٹ ہائوس میں مشیر کی خدمات بھی انجام دے چکی ہیں۔

’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کے مطابق صدر ٹرمپ نے ان افواہوں کی سختی سے تردید کہ ہے کہ وہ اپنی صاحبزادی ایوانکا ٹرمپ کو اقوام متحدہ میں امریکا کی سفیر مقرر کرنا چاہتے ہیں۔

صدر ٹرمپ نے ان خیالات کا اظہار وائٹ ہائوس میں صحافیوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کیا۔ دینا پاول کا نام ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب اقوام متحدہ میں امریکا کی بھارتی نژاد مندوبہ نِکی ہیلی نے رواں سال کے آخر تک اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا ہے۔ صدر ٹرمپ نے ان کا استعفیٰ منظور کرلیا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ نکی ہیلی اپنے جانشین کی تعیناتی میں ان کی مدد کریں گی۔

جہاں تک مصری نژاد دینا پاول کا تعلق ہے تو وہ ٹرمپ کے ساتھ ان کی انتظامی باڈی میں شامل رہ چکی ہیں۔ اس کے علاوہ وہ قومی سلامتی کمیٹی کی نائب مشیر بھی رہیں اور مشرق وسطیٰ میں سفارتی امور بھی انجام دے چکی ہیں۔

نکی ہیلی کے استعفے سے قبل ہی یہ افواہیں گردش کرنے لگی تھیں کہ ان کی جگہ اقوام متحدہ میں ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا کو تعینات کیا جائے گا۔ منگل کو جب نکی ہیلی نے استعفیٰ دیا تو ان کی خدمات کو صدر ٹرمپ کے داماد جارڈ کوشنر اور ان کی اہلیہ ایوانکا دونوں نے سراہا، مگر صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ کہہ کر ان افواہوں کو ختم کردیا کہ وہ دینا پاول کو اقوام متحدہ میں امریکا کی مستقل مندوب تعینات کرنے پر غور کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں