.

ترک میڈیا کی سعودی سیاح مع اہلیہ کو خاشقجی کیس میں ماخوذ کرنے کی بھونڈی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترک اور قطری میڈیا نے استنبول میں سعودی صحافی جمال خاشقجی کو مبیّنہ طور پر ’’لاپتا کرنے کی کارروائی‘‘ کو انجام دینے کے لیے آنے والے جن پندرہ سعودیوں کی تصاویر جاری کی ہیں ،ان میں ایک سعودی سیاح کی تصویر بھی شامل ہے۔اس سعودی شہری نے ماضی میں اپنی اہلیہ کے ساتھ استنبول کی سیاحت کی غرض سے ترکی کا سفر کیا تھا۔

ترک اور قطری میڈیا نے کسی طریقے سے ان دونوں میاں بیوی کی تصویر حاصل کرکے انھیں بھی جمال خاشقجی کو غائب کرنے کے لیے آنے والی مبیّنہ ٹیم میں شامل کردیا ہے۔ یوں انھوں نے ان دونوں بے گناہ شہریوں کی زندگیوں کو ایک جانب تو خطرے سے دوچار کردیا ہے اور دوسری جانب انھیں جمال خاشقجی کے اچانک لاپتا ہونے کے واقعے میں اپنی اپنی من گھڑت کہانی میں بھی ماخوذ کردیا ہے۔

ترک اور قطری میڈیا نے سعودی شہری صالح آل تبیکی اور ان کی اہلیہ کی جو تصویر جاری کی ہے، وہ حال کی ہے بھی نہیں اور یہ ان کے ماضی میں ترکی کے سیاح کی حیثیت سے سفر کے دوران میں لی گئی تھی لیکن ترک اور قطری میڈیا سے دھڑلے سےاس کو حال کی تصویر بنا کر پیش کردیا ہے اور کہا ہے کہ وہ بھی مبیّنہ سعودی ٹیم کا حصہ تھے۔