دائیں بازو کی نسل پرستی کے خلاف جرمنی میں ڈیڑھ لاکھ افراد کا مظاہرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

جرمنی کے دارالحکومت برلن میں ہفتے کے روز دائیں بازو کے انتہا پسندوں کی سرگرمیوں اور نسل پرستی کے خلاف ہزاروں افراد نے احتجاجی ریلی نکالی۔ برلن کی تاریخ میں گذشتہ روز ہونے والا مظاہرہ بڑے مظاہروں میں شمار کیا جا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق برلن میں سول سوسائٹی اور نسل پرستی کے خلاف سرگرم تنظیموں کی اپیل پر نکالی گئی ریلی میں قریبا ڈیڑھ لاکھ افراد نے شرکت کی۔

خیال رہے کہ برلن میں یہ احتجاجی ریلی ملک میں دائیں بازو کی ایک انتہا پسند جماعت کی سرگرمیوں میں اضافے مشرقی جرمنی میں پناہ گزینوں کے خلاف نسل پرستانہ واقعات کے تناظر میں نکالی گئی۔

برلن پولیس کے ترجمان نے ایمنسٹی اور دیگر انسانی حقوق کے اداروں کی طرف سے نکالی گئی ریلی کے شرکاء کی تعداد بتانے سے گریز کیا تاہم بعض ذرائع ابلاغ شرکاء کی تعداد لاکھوں میں‌بیان کرتے ہیں۔

مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر "ہم سب نسل پرستی کے خلاف متحد ہیں" کے نعرے درج تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں