.

سعودی عرب مخالف میڈیا مہم کوئی نئی بات نہیں :وزیر مملکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وزیر مملکت برائے خلیج امور ثامر السبھان نے کہا ہے کہ ان کے ملک کے خلاف میڈیا کے جھوٹ اور مہمیں کوئی نئی بات نہیں ہے۔

ثامر السبھان نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ ترکی کے شہر استنبول میں 2 اکتوبر کو صحافی جمال خاشقجی کے لاپتا ہونے کے بعد سعودی عرب کو جن الزامات کا سامنا ہے ، یہ اس کے خلاف عشروں سے جاری منظم مہم ہی کا حصہ ہیں۔

خلیج کے متعدد لیڈر قبل ازیں یہ کہہ چکے ہیں کہ جس طریقے سے قطری اور بین الاقوامی میڈیا نے سعودی صحافی کی گمشدگی کے واقعے کو رپورٹ کیا ہے ، وہ سعودی عرب کو ہدف بنانے کے لیے برپا کردہ مہم کا واضح ثبوت ہے۔

ان لیڈروں نے سعودی عرب کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کیا ہے اور خبردار کیا ہے کہ سعودی مملکت کو سیاسی طور پر ہدف بنانے کے لیے شروع کی گئی میڈیا مہموں کے سنگین مضمرات ہوں گے۔انھوں نے قطر سے تعلق رکھنے والے میڈیا اداروں اور ایجنسیوں کے ذریعے خاشقجی کیس کے سلسلے میں پھیلائی گئی افواہوں اور الزامات کے بعد یہ بیانات جاری کیے ہیں۔