.

سعودی اسٹاک مارکیٹ میں مندی کے ایک روز بعد تیزی ، مجموعی حجم میں 4 فی صد اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی اسٹاک مارکیٹ میں مندی کے رجحان کے صرف ایک روز بعد تیزی دیکھنے میں آئی ہے اور سوموار کواس کے پوائنٹس میں قریباً 300 تک اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ۔اس طرح مارکیٹ کے مجموعی کاروباری حجم میں 4.14 فی صد اضافہ ہوا ہے اور 6 ارب 30 کروڑ ریال مالیت کے حصص کا لین دین ہوا ہے۔

اسٹاک مارکیٹ میں بنک کاری اور پیٹرو کیمیکلز کے شعبوں کے حصص کی شرح منافع میں خاص طور پر نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور غیرملکی سرمایہ کاروں نے بھی ان کے حصص کی خرید میں سب سے زیادہ دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

اعماق انوسٹمنٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ( سی ای او) محمد العمران نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’’ سعودی اسٹاک مارکیٹ میں فوری تیزی صنعت ، توانائی اور معدنی وسائل کے وزیر خالد الفالح سمیت سعودی حکام کے حالیہ بیانات کا مثبت ردعمل ہے اور مندی کے صرف ایک روز بعد ہی تیزی دیکھنے میں آئی ہے۔سعودی حکام نے واضح کیا ہے کہ تیل کی عالمی مارکیٹ میں مملکت اپنا اہم کردار ادا کرتی رہے گی۔

العمران نے کمپنیوں کی بڑھتی ہوئی شرح منافع کی سعودی اسٹاک مارکیٹ کی مضبوطی میں اہمیت کو اجاگر کیا ہے۔بالخصوص پیٹرو کیمیکل کمپنیوں کی شرح نمو میں نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔اس سے سرمایہ کاروں میں سعودی مارکیٹ کے حصص خرید کرنے کی کشش پیدا ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کی ایک اپنی عالمی اقتصادی اہمیت ہے ۔تیل کی عالمی مارکیٹ میں اس کے کردار سمیت مختلف پہلو ہیں ۔یہ گروپ 20 کا اٹھا رواں ملک ہے۔اس کے علاوہ خطے میں اقتصادی استحکام کو برقرار رکھنے میں بھی اس کا ایک اہم کردار ہے۔