الجزائر میں پارلیمنٹ کو لوہے کی زنجیروں سے کیوں بند کیا گیا ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الجزائر میں ارکان پارلیمنٹ نے منگل کی صبح پارلیمنٹ کی عمارت کو لوہے کی زنجیروں کے ذریعے بند کر دیا۔ اس اقدام کا مقصد اسپیکر سعید بوحجہ کو ان کے دفتر میں داخل ہونے سے روکنا اور مستعفی ہونے پر مجبور کرنا ہے۔

الجزائر میں پارلیمانی بحران تیسرے ہفتے میں داخل ہو چکا ہے۔

منگل کے روز پارلیمنٹ میں اکثریت کی حامل دو جماعتوں سے تعلق رکھنے والے ارکان پارلیمنٹ کے داخلی راستے پر جمع ہو گئے۔ اس سے قبل انہوں نے پارلیمںٹ کے مرکزی دروازے کو لوہے کی زنجیروں سے بند کر دیا تھا۔ بعد ازاں ارکان نے اسپیکر سعید بوحجہ کی سبک دوشی کے واسطے دباؤ ڈالنے کے لیے احتجاج کیا۔

واضح رہے کہ اسپیکر سعید بوحجہ تمام تر دباؤ کے باوجود ملک کی تیسری اہم شخصیت کے طور پر اپنے منصب پر ڈٹے ہوئے ہیں۔ اس دباؤ کی آخری کڑی بوحجہ کی اپنی جماعت "جبہۃ التحرير الوطنی" کی جانب سے اسپیکر کو ڈسپلنری کمیٹی کے سامنے پیش کیا جانا تھا۔

الجزائر میں ماضی میں مختلف نوعیت کے بحرانات کے باوجود اس سے قبل قانون ساز ادارے کے ارکان کی جانب سے اس طریقے سے احتجاج دیکھنے میں نہیں آیا۔

حالیہ بحران کے نتیجے میں پارلیمنٹ ڈیڈ لاک کی صورت حال سے دوچار ہے اور اس کے اجلاسوں سمیت تمام تر سرگرمیاں منجمد ہو چکی ہیں۔ پارلیمانی بحران کے باعث سال 2019ء کے لیے بجٹ سے متعلق قانون بھی زیر بحث آنے سے رہ گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں