.

پومپیو اور اوگلو کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ، شام اور دہشت گردی پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کے وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو اور ان کے امریکی ہم منصب مائیک پومپیو کے درمیان ٹیلیفون پر بات چیت ہوئی ہے۔ بات چیت میں دو طرفہ تعلقات، انسداد دہشت گردی اور شام کی صورت حال پر تبادلہ خیال ہوا۔

سفارتی ذرائع کے مطابق مذکورہ ٹیلیفونک بات چیت ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن اور ان کے امریکی ہم منصب ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان ٹیلیفون کال پر رابطے کے بعد ہوئی۔

ترکی کے ایوان صدر کے دفتر کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا کہ ایردوآن نے ٹرمپ کے ساتھ دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات، دہشت گردی کے خلاف جنگ اور شام میں تازہ ترین پیش رفت کے حوالے سے نقطہ ہائے نظر کا تبادلہ کیا۔

بیان کے مطابق دونوں سربراہان کی گفتگو کے دوران امریکی پادری اینڈرو برینسن کے معاملے کے حوالے سے قانونی پہلو بھی زیر بحث آئے۔ ایردوآن اور ٹرمپ نے دونوں ملکوں کے درمیان تعاون مضبوط کرنے، تمام شعبوں میں تعلقات کو معمول کے مطابق بنانے اور "گولن" تنظیم سمیت دہشت گردی کے خلاف جنگ کے حوالے سے اپنے عزم کا اظہار کیا۔

ترکی اور امریکا کے صدور نے ادلب معاہدے اور شام کے علاقے منبج میں روڈ میپ پر جلد از جلد عمل درامد کی اہمیت پر اتفاق کیا۔