.

بسوں میں پیسوں کے بجائے پلاسٹک کی باقیات کے بدلے ٹکٹ

انڈونیشیا میں پلاسٹک تلفی کی منفرد مہم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انڈونیشیا کے دوسرے بڑے شہر سورابایا میں پلاسٹک کی باقیات سے نجات پانے کے لیے ایک نئی اور منفرد مہم شروع کی گئی ہے۔ شہریوں کی ترغیب کے لیے مسافر بسوں میں پیسے کے بجائےشہری پلاسٹک کی باقیات دے کر سفر کرسکتے ہیں۔

خبر رساں اداروں کے مطابق حکومت کی طرف سے شروع کی گئی اس مہم کے تحت بسوں میں سوار ہونے والے شہری پلاسٹک کی استعمال شدہ بوتیں اور پلاسٹک کی دیگراستعمال شدہ چیزیں دےکر مفت ٹکٹ حاصل کرسکتےہیں۔

یہ مہم رواں سال اپریل میں شروع کی گئی تھی۔ شہر کے اندر چلنے والی سرخ ٹرانسپورٹ بسوں میں شہری شیشے اور پلاسٹک کی بوتلوں کے عوض ٹکٹ لے سکتے ہیں۔ بہت سے شہری روزانہ کی بنیاد پر پلاسٹک کی اشیاء کے عوض سفر کرتےہیں۔

بس اسٹیشنوں پرپلاسٹک کی اشیاء جمع کراکے ان کے بدلے بسوں کی ٹکٹ یا پیسے وصول کیے جاسکتے ہیں۔

اگرکسی مسافر کو دو گھنٹے کا سفر کرنا ہے تو وہ پلاسٹک کے 10 یا شیسے کے 5 ناکارہ کپ، گلاس یا ان کے برابر اشیاء دے کر سفر کی سہولت حاصل کرسکتا ہے۔

شہری حکومت کا کہنا ہے کہ اس مہم کا مقصد شہر کو سنہ 2020ء تک پلاسٹک کی باقیات سے صاف کرنا ہے۔

ایک مقامی شہری لیندا رحمواتی کا کہنا ہے کہ شہر کو ماحولیاتی آلودگی سے بچانے کی یہ منفرد مہم ہے مگر شہر میں یومیہ 400 ٹن پلاسٹک کی باقیات جمع ہوتی ہیں۔ انہیں آسانی سے تلف کرنا یا ٹھکانے لگانا آسان نہیں۔