.

افغانستان : فوجی ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ، اعلیٰ افسروں سمیت 25 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے مغربی صوبے فراہ میں خراب موسم کی وجہ سے ایک فوجی ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہوگیا ہے ،جس کے نتیجے میں بعض اعلیٰ عہدے داروں سمیت پچیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

صوبائی گورنر کے ترجمان ناصر مہدی نے بتایا ہے کہ ہیلی کاپٹر میں بعض اعلیٰ فوجی افسر سوار تھے اور یہ پہاڑ ی علاقے میں واقع ضلع انار درّہ سے پرواز کے کوئی تھوڑی دیر بعد ہی بدھ کی صبح 9 بج کر 10 منٹ پر گر کر تباہ ہوگیا۔ہیلی کاپٹر نزدیک واقع صوبہ ہرات کی جانب جارہا تھا۔

انھوں نے بتایا کہ ہیلی کاپٹر میں افغانستان کے مغربی زون کے ڈپٹی کور کمانڈر اور فراہ کی صوبائی کونسل کے سربراہ بھی دیگر افراد کے ساتھ سوار تھے۔

جیل کے باہر خود کش بم حملہ

دریں اثناء افغان دارالحکومت کابل کے مشرق میں واقع ملک کی سب سے بڑی جیل پُلِ چرخی کے باہر ایک حملہ آور بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا ہے جس سے سات افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

افغان وزارت ِداخلہ کے ترجمان نجیب دانش نے بتایا ہے کہ بدھ کی صبح خودکش بمبار نے جیل کے عملہ کو لانے والی ایک بس کو حملے میں نشانہ بنایا ہے۔پُل چرخیِ جیل میں سیکڑوں مجرمان قید ہیں ۔ان میں طالبان مزاحمت کاروں کی بھی ایک بڑی تعداد شامل ہے۔

جیل کے ایک افسر عبداللہ کریمی نے بتایا ہے کہ خودکش بمبار نے جیل کے مرکزی گیٹ کے نزدیک بم حملہ کیا تھا۔اس وقت وہاں قیدیوں سے ملاقات کے لیے آنے والے افراد کی بڑی تعداد بھی موجود تھی۔انھیں سخت سکیورٹی کے بعد جیل کے احاطے میں داخل ہونے کی اجازت دی جاتی ہے۔

فوری طور پر کسی گروپ نے اس خودکش بم حملے کی ذمے دار ی قبول نہیں کی ہے۔ واضح رہے کہ حالیہ مہینوں کے دوران میں طالبان مزاحمت کاروں کےعلاوہ داعش کے جنگجوؤں نے بھی کابل میں متعدد بم حملے کیے ہیں اور انھوں نے خودکش بم دھماکوں میں سرکاری عمارتوں اور حکام کو نشانہ بنایا ہے۔