.

ایتھوپیا میں صدر کے بعد سپریم کورٹ کی چیف جسٹس بھی خاتون مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افریقی ملک ایتھوپیا میں خاتون صدر کے بعد ملک کی سب سے اعلیٰ عدالت کی سربراہی بھی ایک خاتون کو سونپی گئی ہے۔

جمعرات کے روز ایتھوپیا کی پارلیمنٹ نے میازا اشیفانی کو ملک کی سپریم کورٹ کی چیف جسٹس مقرر کیا۔ اس سے قبل اکتوبر میں وزیراعظم ابیی احمد کے اقدامات کے بعد سھل ورق زودی کوملک کی صدر منتخب کیا گیا تھا۔

ایتھوپیا میں کسی خاتون کا حکومت کے اعلیٰ عہدوں تک پہنچنا کوئی حیرت کی بات نہیں۔ ملک کی کابینہ کے 20 وزراء میں 10 وزارتیں خواتین کے پاس ہیں۔

وزیراعظم کے مشیر فیٹسوم اریگا نے "ٹوئٹر" پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں‌ بتایا کہ حکومت اہم ریاستی عہدوں پر مردو خواتین کو یکساں مواقع فراہم کرنا چاہتی ہے۔

ایتھوپیا کی وزیراعظم کی شہرت کو اس وقت نقصان پہنچا جب انہوں‌ نے ایک 14 سالہ لڑکی کے ہاتھوں ایک شخص کے قتل کی حمایت کی تھی۔ مقتول لڑکی سے شادی کرنا چاہتا تھا مگر لڑکی نے شادی سے بچنے کے لیے اس کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا۔