.

سعودی عرب کا یمن کے شہر مآرب کے ہوائی اڈے کی تعمیرِ نو کا منصوبہ : تصاویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے یمن میں متعیّن سفیر محمد آل جابر نے جنگ زدہ ملک کے وسطی شہر مآرب کے ہوائی اڈے کی تعمیرِ نو کے منصوبے کا اعلان کیا ہے۔

محمد آل جابر نے ، جو یمن کے لیے سعودی عرب کے ترقی و تعمیر نو پروگرام کے سربراہ ہیں ، العربیہ نیوز چینل سے خصوصی انٹرویو میں کہا ہے کہ اس منصوبے سے یمنی عوام کے لیے روزگار کے بالواسطہ اور بلا واسطہ ہزاروں مواقع پیدا ہوں گے۔

انھوں نے بتایا کہ مآرب کے ہوائی اڈے سے ہر سال بیس لاکھ مسافر سفر کر یں گے۔ اس کو اندرون اور بیرون ملک بین الاقوامی پروازوں کے لیے استعمال کیا جائے گا۔ہوائی اڈے کے منصوبے سے یمنیوں کو روزگار کے پانچ ہزار بالواسطہ اور دس ہزار بلاواسطہ مواقع پیدا ہوں گے۔

محمد آل جابر کا کہنا تھا کہ شکاگو کے ہوائی اڈے پر کام کرنے والی ایک بین الاقوامی فرم مآرب کے ہوائی اڈے کے ڈیزائن پر کام کررہی ہے۔اس منصوبے کے علاوہ یمن میں تعمیر وترقی کے دوسرے منصوبوں پر بھی کام جاری ہیں۔ان سے یمن میں سرمایہ کاری اور کاروباری سرگرمیوں کو فرو غ ملے گا۔

ان سے جب پوچھا گیا کہ مآرب میں بین الاقوامی ہوائی اڈے کی تعمیر کے منصوبے کا سب سے پہلے کیوں انتخاب کیا گیا ہے ؟اس کے جواب میں سفیر محمد آل جابر نے کہا کہ مآرب یمنی دارالحکومت صنعاء سے200 کلومیٹر کی دوری پر واقع ہے اور اس ہوائی اڈے کو حضر موت ، الجوف اور شبوہ صوبوں سے تعلق رکھنے والے شہری بھی اندرون اور بیرون ملک سفر کے لیے استعمال کرسکیں گے۔

سعودی ترقی اور تعمیر نو پروگرام کے تحت یمن میں شاہ سلمان تعلیمی اور طبی شہر ، سیئون اسپتال ، الغیضہ میں اسکول اور آب رسانی کا منصوبہ ، پانی کے کنویں کھودنے کا منصوبہ ، السقطری میں دو پاور اسٹیشن ،کڈنی سنٹر ، پیٹرولیم کا منصوبہ ، رہائشی منصوبہ ، سرحدی چوکیوں کی تعمیر اور قومی سلامتی اور انسداد دہشت گردی مرکز کی تعمیر کے منصوبے شامل ہیں۔

یاد رہے کہ سعودی عرب نے قبل ازیں یمن کی کرنسی کو سنبھالا دینے کے لیے اس کے مرکزی بنک میں دو ارب ڈالرز منتقل کیے تھے۔

یمن میں  متعیّن  سعودی سفیر  محمد آل جابر ۔
یمن میں متعیّن سعودی سفیر محمد آل جابر ۔