.

واشنگٹن عراق میں کارروائیوں کے ذمّے دار حزب اللہ کے ارکان کو سزا دینے کے درپے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزارت خزانہ میں غیر ملکی اثاثوں پر نظر رکھنے والے بیورو (OFAC) نے منگل کے روز بعض اقدامات کیے ہیں جن کا مقصد "حزب الله" سے تعلق رکھنے والے چار افراد کو نشانہ بنانا ہے جو عراق میں مالیاتی اور انٹیلی جنس سرگرمیوں کی قیادت کر رہے ہیں۔

یہ چار افراد شبل محسن عبيد الزيدی، ويوسف هاشم، عدنان حسين كوثرانی اورمحمد عبد الهادی فرحات ہیں۔

امریکی وزارت خزانہ میں دہشت گردی اور فنڈنگ انٹیلی جنس کے امور کے سکریٹری سیگل مینڈلکر کے مطابق "حزب اللہ دہشت گردی پھیلانے میں ایرانی ایجنٹ کا کردار ادا کر رہی ہے۔ یہ عراق کی سیادت کو سبوتاژ کرنے اور مشرق وسطی کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ ہم دہشت گردی کے سہولت کاروں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔ ان میں الزیدی جیسے لوگ ہیں جس نے ایران کے لیے تیل کی اسمگلنگ کی، حزب اللہ کے لیے فنڈنگ جمع کی اور جنگجوؤں کو شام بھیجا"۔